پیر , 10 مئی 2021

اسرائیل کی ایک تہائی آبادی غیر یہودی باشندوں پر مشتمل

یروشلم (مانیٹرنگ ڈیسک)اسرائیل میں سرکاری سطح‌ پر جاری کردہ ایک رپورٹ‌ میں کہا گیا ہے کہ صہیونی ریاست کی ایک تہائی آبادی عربوں اور غیریہودی باشندوں پر مشتمل ہے۔عبرانی اخبار ‘یسرائیل ھیوم’ کی رپورٹ کے مطابق صہیونی ریاست میں مجموعی طور پر یہودی باشندوں کی تعداد 67 لاکھ 38 ہزار 500 ہے جو کہ کل آبادی کا 74 اعشارئی 8 فی صد ہے۔ رپورٹ کے مطابق عبرانی ریاست میں عرب باشندوں‌ کی تعداد 19 لاکھ 70 ہزار 200 ہے جو کہ کل آبادی کا 21 اعشاریہ 8 فی صد ہیں۔

بیت المقدس کے فلسطینی باشندوں کی تعداد 3 لاکھ 50 ہزار ہے۔مجموعی طور پر اندرون فلسطینی آبادی 90 لاکھ ہے۔ سنہ 1948ء کے بعد یہ سب سے زیادہ آبادی ہے۔اسرائیل کے سرکاری اعداد و شمار کے مطابق سنہ 1948ءمیں اندرون فلسطین کی آبادی 8 لاکھ 50 ہزار تھی جن میں سے 6 لاکھ 50 یہودی اور ایک لاکھ 50 ہزار عرب تھے۔ صہیونی ریاست کے قیام کے بعد 8 لاکھ فلسطینیوں کو جبری ھجرت پر مجبور کیا گیا۔

یہ بھی دیکھیں

ایران و چین معاہدے پر امریکہ چراغ پا

امریکی صدر نے ایران اور چین کے 25 سالہ معاہدے پر سخت تشویش کا اظہار …