ہفتہ , 8 مئی 2021

نوازشریف کو ریلی کی صورت میں جیل منتقل کرنے کا فیصلہ

لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک) مسلم لیگ (ن) کی نئی قیادت نے نواز شریف کی ضمانت کی مدت ختم ہونے پر 7 مئی کی رات جاتی امرا سے کوٹ لکھپت جیل منتقلی کے موقع پر سیاسی قوت کا مظاہرہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔نجی ٹی وی چینل کے مطابق پارٹی کی نئی تنظیم سازی کے بعد ماڈل ٹاؤن لاہور میں مسلم لیگ (ن) کے مرکزی سیکریٹریٹ میں پارٹی کا اجلاس ہوا، پارٹی کے اندرونی ذرائع کے مطابق اجلاس کے دوران نواز شریف کی سات مئی کی رات جیل منتقلی کے لیے حکمت عملی پر غور کیا گیا۔

کچھ اراکین کی رائے تھی کہ نواز شریف نے ریلی وغیرہ کی صورت میں جانے سے منع کیا ہے اس لیے نواز شریف کی ہدایت اور رمضان کی وجہ سے کارکنوں کو جاتی امرا آنے سے منع کر دیا جائے، جبکہ زیادہ تر رہنماؤں کی رائے تھی کہ پارٹی کارکنوں کو متحرک اور فعال رکھنے کیلیے نواز شریف کی جیل منتقلی کے موقع پر سیاسی قوت کا مظاہرہ کیا جائے۔

بعدازاں متفقہ فیصلہ کیا گیا کہ سات مئی کو نماز تراویح کے بعد نواز شریف رات 12 بجے سے پہلے پہلے ازخود جیل منتقل ہوں گے اور رات 8 بجے انھیں ان کی رہائش گاہ جاتی امرا سے بڑی ریلی کی صورت میں کوٹ لکھپت جیل منتقل کیا جائے گا جس کے روٹ کا فیصلہ آج یا کل کر لیا جائے گا۔

یہ بھی دیکھیں

پاکستان جنوبی ایشیا میں امن و استحکام کا خواہاں، عارف علوی

پاکستان کے صدر عارف علوی نے علاقائی تنازعات کے پرامن حل کی ضرورت پر زور …