پیر , 17 مئی 2021

اسرائیلی بمباری سےتباہ ہونے والےمکانات کی تعمیر کے لیے امداد فراہم کیجائے؛ناجی سرحان

مقبوضہ بیت المقدس (مانیٹرنگ ڈیسک)فلسطینی حکومت نے غزہ کی پٹی میں رواں ہفتےاسرائیلی فوج کی وحشیانہ بمباری میں تباہ ہونے والے مکانات کی تعمیر اور متاثرین کی بحالی کے لیے فوری امداد فراہم کرنےکا فیصلہ کیا ہے۔ یہ امداد فلاحی اداروں کے تعاون سے دی جائے گی۔ فلسطینی وزارت ہائوسنگ کے سیکرٹری ناجی سرحان نے بتایا کہ حکومت اسرائیلی بمباری کے نتیجے میں مکان سے محروم ہونےوالے شہریوں کی بحالی کے لیے فی گھر1000 ڈالر کی رقم ادا کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

غزہ میں ایک پریس کانفرنس سے خطاب میں فلسطینی وزارت ہائوسنگ کے عہدیدار نے کہا کہ صہیونی فوج نے مکانات، دفاتر، تجارتی مراکز اور شہری املاک حتیٰ کہ زرعی املاک کو بھی بلا امتیاز بمباری کا نشانہ بنایا جس کے نتیجے میں علاقے میں املاک کو غیرمعمولی نقصان پہنچا ہے۔ سرحان کا کہنا ہے کہ ہماری پہلی ترجیح گھروں سے محروم ہونے والے شہریوں کی آباد کاری اور بحالی ہے۔انہوں‌نے بتایا کہ صہیونی فوج کی بمباری سے الشجاعیہ کےعلاقے میں 13 اسکولوںکو نشانہ بنا کرتباہ کیا۔ اس کے علاوہ غزہ میں بجلی گھروں کو بھی بمیاری کا نشانہ بنایا گیا۔

السرحان نے کہا کہ اسرائیلی بمباری سے مکانات اور دیگر املاک کی تباہی سےبند ہونے والی سڑکیں‌کھول دی گئی ہیں۔ اسرائیلی بمباری سے 100 رہائشی مکانات مکمل تباہ، 30 ناقابل رہائش حد تک متاثر ہوئی ہیں جب کہ 700 رہائشی یونٹوں کو درمیانی یا معمولی درجے کا نقصان پہنچا ہے۔ ان مکانات کی مرمت کے لیے اقوام متحدہ کے ادارے’UNDP ‘ سے مدد لی جائے گی۔

یہ بھی دیکھیں

سپاہ قدس کے سربراہ اور حماس کے رہنما کے درمیان بات چیت

تہران: سپاہ قدس کے سربراہ اور جنرل قاسم سلیمانی شہید کے جانشین جنرل قاآنی کی …