منگل , 13 اپریل 2021

آئی ایم ایف پروگرام میں تاخیر: معیشت کو بھاری نقصان، مہنگائی بڑھی

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) آئی ایم ایف پروگرام میں تاخیر پر معیشت کو بھاری نقصان ہوا، ڈالر کی قدر بڑھنے سے مہنگائی کا طوفان آگیا جبکہ سٹاک مارکیٹ میں 57 سو پوائنٹس کی کمی ہوئی۔ صنعتی شعبے میں ترقی کی شرح منفی ایک اعشاریہ پانچ فیصد پر آگئی۔

حکومت نے آئی ایم ایف کے پاس جاتے جاتے پورے 10 ماہ لگا دیئے اور نتیجہ یہ نکلا کہ سٹاک مارکیٹ سے سرمایہ نکالے جانے کے باعث انڈیکس 5700 پوائنٹس تک گرگیا۔صنعتی ترقی منفی زون میں چلی گئی جس کے باعث بے روزگاری کا سیلاب امڈ آیا، روپیہ اپنی قدر کھوتے کھوتے 143 تک پہنچ گیا، پیٹرول 100 روپے سے تجاوز کرگیا، شرح سود 11 فیصد کے قریب پہنچ گیا اور ان سب عوامل نے مل کر مہنگائی کا طوفان برپا کر دیا۔

یہ بھی دیکھیں

حکومت نے تیل و گیس کی پیداوار کی ریئل ٹائم نگرانی شروع کردی

اسلام آباد: صوبوں کی جانب سے شفافیت کے مطالبات سامنے آنے کے بعد وفاقی حکومت …