ہفتہ , 21 ستمبر 2019

انڈیا کا پہلا دہشت گرد ایک ہندو تھا: کمل ہاسن نے انتہا پسندوں کو آئینہ دکھا دیا

چنائے(مانیٹرنگ ڈیسک) ہندوستانی انڈسٹری کے ممتاز اداکار کمل ہاسن نے ایک بار پھر ہندو انتہا پسندوں کا آئینہ دکھا دیا.تفصیلات کے مطابق معروف اداکار نے اپنی انتخابی مہم کے دوران کہا کہ آزادی کے بعد انڈیا کا پہلا دہشت گرد کوئی مسلمان نہیں تھا، کمل ہاسن نے کہا کہ گاندھی کو قتل کرنے والا شخص ایک ہندو تھا، جس کا نام نتھو رام تھا.اداکار نے کہا کہ میں یہ سب اس لیے نہیں کہہ رہا کہ ایک مسلمان علاقے میں مہم چلا رہا ہوں، بلکہ یہی حقیقت ہے، یہی گاندھی کا نظریہ ہے.

خیال رہے کہ کمل ہاسن اپنے روشن خیال اور غیر متعصبانہ نظریات کے لیے مشہور ہیں، وہ ماضی بھی انتہا پسندوں کو تنقید کا نشانہ بنا چکے ہیں.کمل ہاسن نے اپنی منفرد اور متنازع فلم “ہے رام” میں‌ بھی اس نظریے کی ترویج کرتے ہوئے مسلمانوں کی مثبت امیج پیش کی تھی.

دوسری جانب اداکار کے ان الفاظ نے کھلبلی مچا دی ہے. ایک جانب جہاں سیاست داں ان پر تنقید کر رہے ہیں، وہیں ساتھی انتہاپسند اداکاروں کو بھی کمل ہاسن کے بیان نے آگ بگولا کر دیا ہے.

یہ بھی دیکھیں

رابرٹ اوبرائن امریکہ کے قومی سلامتی کے مشیر نامزد

واشنگٹن (مانیٹرنگ ڈیسک)امریکا کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے یرغمالیوں کے حوالے سے مذاکرات کار رابرٹ …