منگل , 13 اپریل 2021

اسرائیلی فوج کاکریک ڈاؤن ، 100 فلسطینی روزہ دار گرفتار

مقبوضہ بیت المقدس (مانیٹرنگ ڈیسک)فلسطین میں انسانی حقوق اور اسیران کے لیے کام کرنے والے مرکز کی طرف سے جاری کردہ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ ماہ صیام کے پہلے عشرے کے دوران اسرائیلی فوج کے وحشیانہ کریک ڈائون میں 100 فلسطینی روزہ داروں کو حراست میں لے لیا۔ ان میں 18 بچے اور 4 خواتین شامل ہیں۔

مرکز اسیران اسٹڈی سینٹر کی رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ صہیونی فوج کی طرف سے ماہ صیام کی آمد کے ساتھ ہی فلسطینیوں کے خلاف وحشیانہ کریک ڈائون کا سلسلہ شروع کر دیا تھا۔ قابض فوج نے غرب اردن، بیت المقدس اور دیگر فلسطینی علاقوں میں گھر گھر تلاشی کے دوران دسیوں فلسطینیوں کو حراست میں لے لیا۔ ان میں بعض سابق اسیران اور غزہ میں ماہی گیر بھی شامل ہیں۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ قابض فوج نے ماہ صیام کے دوران 18 بچوں کو حراست میں لیا۔ ان میں 9 سالہ موسیٰ رمضان اور دو سگے بھائی 13 سالہ محمد اور احمد ابو عادی بھی شامل ہیں۔ ماہ صیام کے پہلے عشرے میں قابض فوج کے کریک‌ ڈائون میں چار خواتین اور دو صحافیوں کو حراست میں لے لیا۔خیال رہے کہ اسرائیلی جیلوں میں اس وقت 5700 فلسطینی پابند سلاسل ہیں۔ ان میں 700 فلسطینی مریض، 48 خواتین، 230 بچے اور 500 انتظامی قیدی شامل ہیں۔

یہ بھی دیکھیں

ایران و چین معاہدے پر امریکہ چراغ پا

امریکی صدر نے ایران اور چین کے 25 سالہ معاہدے پر سخت تشویش کا اظہار …