جمعرات , 27 جون 2019

نائیجیریا کے فوجیوں کا شیخ زکزکی کے حامیوں پر حملہ

ابوجا(مانیٹرنگ ڈیسک)نائیجیریا کے فوجی اہلکاروں نے زاریا شہر میں اسلامی تحریک کے رہنما آیت اللہ شیخ ابراہیم زکزکی کے حامیوں پر فائرنگ کردی ہے۔پرس ٹی وی کے مطابق اسلامی تحریک کے رہنما آیت اللہ شیخ ابراہیم زکزکی کے حامیوں نے نائیجیریا کے شمالی صوبے کادونا کے شہر زاریا میں اپنے رہنما کی حمایت میں ریلی نکالی تھی۔نائیجیریا کے فوجیوں نے ریلی میں شریک لوگوں پر فائرنگ کردی۔فائرنگ کے اس واقعے میں شیخ زکزکی کے متعدد حامی زخمی ہوگئے۔

نائیجیریا کی فوج نے تیرہ دسمبر دوہزار پندرہ کو زاریا شہر میں حسینیہ بقیت اللہ اور شیخ زکزکی کے گھر پر وحشیانہ حملہ کردیا تھا جس میں سیکڑوں افراد شہید ہوگئے تھے جبکہ آیت اللہ شیخ زکزکی اور ان کی اہلیہ کو شدید زخمی حالت میں گرفتار کرلیا تھا۔ اگرچہ نائیجیریا کی اعلی عدالت نے آیت اللہ شیخ زکزکی کی رہائی کا حکم دیا ہے لیکن نائیجیریا کی حکومت اور فوج نے انہیں ابھی تک رہا نہیں کیا ہے۔

آیت اللہ شیخ زکزکی کے اہل خانہ کے قریبی ذرائع کا کہنا ہے کہ جیل میں شیخ زکزکی کی جسمانی حالت تشویشناک ہے اس لئے انہیں فوری طور پر رہا کردیا جانا چاہئے۔پچھلے مہینوں کے دوران آیت اللہ شیخ زکزکی کی رہائی کے حق میں نائیجیریا کے مختلف شہروں میں مظاہرے ہوئے ہیں جنھیں فوج نے طاقت کے ذریعے کچلنے کی کوشش کی ہے۔

یہ بھی دیکھیں

عرب ملکوں کو فلسطین کا سودا کرنے کا کوئی حق نہیں: خالد مشعل

مقبوضہ بیت المقدس (مانیٹرنگ ڈیسک)اسلامی تحریک مزاحمت ‘حماس’ کے سیاسی شعبے کے سابق سربراہ خالد …