بدھ , 14 اپریل 2021

ایران کے دشمن ناکامی سے دوچار ہوں گے، صدر مملکت ڈاکٹر حسن روحانی

تہران (مانیٹرنگ ڈیسک)صدر ایران ڈاکٹر حسن روحانی نے کہا ہے کہ دشمن پچھلے چالیس برس سے طاقتور، متحدہ اور ترقی یافتہ ایران کے قیام کو روکنے کی کوشش کر رہا ہے اور آج اس کا پورا دباؤ اقتصادی شعبے پر مرکوز ہے تاکہ ہماری ترقی کے راستے کو روکا جا سکے لیکن دشمن کو ناکامی کا منہ دیکھنا پڑے گا۔بدھ کی شب تاجروں اور صنعت کاروں کی افطاری اور عشائیے سے خطاب کرتے ہوئے صدر مملکت ڈاکٹر حسن روحانی نے واضح الفاظ میں کہا کہ ایران کو کمزور کرنے کی دشمن کی اب تک کی کوششیں بے نتیجہ رہی ہیں اور آئندہ بھی ایسی کوششوں کا کوئی نتیجہ برآمد نہیں ہو گا۔

قبل ازیں صوبہ آذربائیجان غربی نے ادارہ جاتی کونسل کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے صدر ایران ڈاکٹر حسن روحانی نے امریکہ کی غیر قانونی پابندیوں کی جانب اشارہ کرتے ہوئے کہا تھا کہ امریکہ کی جنگ حکومت ایران سے نہیں بلکہ آٹھ کروڑ بیس لاکھ ایرانیوں کے خلاف جنگ ہے۔صدر ایران نے دو ٹوک الفاظ میں کہا تھا کہ دین، اسلام، عزت اور خودمختاری کے ماڈل کی حثیت سے اسلامی جمہوریہ ایران امریکہ کے مقابلے میں ڈٹا ہوا ہے اور ایرانی عوام دشمن کے سامنے سرتسلیم خم نہیں کریں گے۔

صدر مملکت کا کہنا تھا ایران اپنا تیل عالمی منڈی میں فروخت کرتا رہے گا اور پوری قوت کے ساتھ امریکی پابندیوں کو بائی پاس کر دے گا۔امریکہ کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے آٹھ مئی دو ہزار اٹھارہ کو ایران کے ساتھ ہونے والے ایٹمی معاہدے سے یک طرفہ طور پر علیحدگی اختیار اور ایران کے خلاف تمام ظالمانہ پابندیاں دوبارہ عائد کرنے کا اعلان کیا تھا۔

ٹرمپ کے اس اقدام پر اندرونِ اور بیرونِ امریکہ شدید نکتہ چینی کی جاتی رہی ہے۔رہبر انقلاب اسلامی آیت اللہ العظمی سید علی خامنہ ای نے گزشتہ ہفتے ملک کے اعلی حکام کے ساتھ ملاقات میں فرمایا تھا کہ ایران کے عوام نے امریکہ کے مقابلے میں استقامت کا حتمی فیصلہ کر لیا ہے اور امریکہ پسپائی اختیار کرنے پر مجبور ہو جائے گا۔ واضح رہے کہ اسلامی جمہوریہ ایران خطے میں امریکی، سعودی اور صیہونی تکون کی ناپاک سازشوں اور اقدامات کے مقابلے میں اہم کردار ادا کر رہا ہے۔

یہ بھی دیکھیں

ایران و چین معاہدے پر امریکہ چراغ پا

امریکی صدر نے ایران اور چین کے 25 سالہ معاہدے پر سخت تشویش کا اظہار …