ہفتہ , 24 اگست 2019

ملائیشین تنظیم کی عالمی عدالت انصاف میں اسرائیل کے خلاف درخواست دائر

کولالمپور(مانیٹرنگ ڈیسک)ملائیشیا کی ایک تنظیم نے ہیگ میں قائم عالمی عدالت انصاف میں اسرائیل کے خلاف ایک درخواست دائر کی گئی ہے جس میں صہیونی ریاست کو مقبوضہ فلسطینی علاقوں میں انسانیت کے خلاف جرائم کا مرتکب قرار دیا گیا ہے۔ "My Aqsa” نامی ایک غیر سرکاری تنظیم کی طرف سے اسرائیل کے خلاف دائر کردہ دعوے میں اسرائیل کی فوجی اور سیاسی قیادت کو فلسطینیوں کے خلاف جرائم کا مرتکب اور قصور وار قرار دیا ہے۔

تنظیم کی قانونی امور دیکھنے والی کمیٹی کے چیئرمین ازریل محمد امین نے کہا کہ انہوں‌ نے اس درخواست میں بعض ایسی عالمی قراردادوں اور قوانین کو شامل کیا ہے جو فلسطینی اراضی غصب کرنے کو جرم اور مقبوضہ عرب علاقوں میں یہودی آباد کاری کوغیر قانونی قرار دیتے ہیں۔ان قراردادوں میں سلامتی کونسل کی قرارداد 2334 جسے دسمبر 2016ء کو منظور کیا گیا تھا، شامل ہے۔ اس میں امریکا نے اس وقت قرارداد کی مخالفت نہیں کی۔ سلامتی کونسل کے 15 میں سے 14 ارکان نے قرارداد کی حمایت کی۔

ازریل محمد کو توقع ہے کہ ان کی کاوش سے عالمی عدالت انصاف میں صہیونی ریاست کے فوجی جرائم کی تحقیقات اور جنگی جرائم اور نسل کشی میں ملوث اسرائیلی فوجی افسران کے خلاف کارروائی کی راہ ہموار ہوگی۔خیال رہے کہ عالمی عدالت انصاف میں اسرائیل کے جنگی جرائم کی تحقیقات کے لیے اس سے قبل بھی کئی درخواستیں دائر کی گئی ہیں تاہم عالمی عدالت کی طرف سے فلسطینیوں‌ کے جنگی جرائم کی تحقیقات کے لیے کوئی موثر قدم نہیں اٹھایا گیا۔

یہ بھی دیکھیں

بھارت مقبوضہ کشمیر میں عوام پر ہونے والے ظلم و بربریت کو روکے:آیت اللہ سید علی خامنہ ای

تہران (مانیٹرنگ ڈیسک)رہبرانقلاب اسلامی نے کشمیری مسلمانوں کی صورتحال پر اپنی ناراضگی، دکھ اور افسوس …