جمعہ , 20 ستمبر 2019

اسرائیل کو فلسطین میں توسیع پسندی کا سلسلہ ترک کرنا ہوگا: کویت

کویت سٹی (مانیٹرنگ ڈیسک)خلیجی ریاست کویت نے باور کرایا ہے کہ جب تک صہیونی ریاست کی طرف سے فلسطین میں‌ یہودی آباد کاری اور توسیع پسندی کا سلسلہ جاری ہے اس وقت تک اسرائیل کے ساتھ امن کی بات چیت نہیں‌ ہوسکتی۔ سلامتی کونسل کےاجلاس سے خطاب میں کویت کے مندوب منصور العتیبی نے کہا کہ اسرائیل کو فلسطین میں توسیع پسندی کا سلسلہ ترک کرنا ہوگا۔ اگر صہیونی ریاست فلسطینی علاقوں میں توسیع پسندی کا سلسلہ جاری رکھتی ہے تو اس کے ساتھ کسی قسم کی امن بات چیت آگے نہیں بڑھائی جاسکتی۔العتیبی نے کہا کہ فلسطین میں منصفانہ اور دیر پا امن کے قیام کی راہ میں اسرائیل کی توسیع پسندی رکاوٹ ہے۔

انہوں‌ نے مزید کہا کہ فلسطین میں اسرائیل کی توسیع پسندانہ سرگرمیاں غیرقانونی اور غیر آئینی ہیں۔ عالمی برادری کو صہیونی ریاست کی توسیع پسندی کی روک تھام کے لیے اپنا کردار اداکرنا چاہیے۔

کویت کے مندوب نے یہودی آباد کاروں‌ کی مسجد اقصیٰ‌ کی بے حرمتی کی شدید مذمت کی۔ اُنہوں‌ نے کہا کہ قبلہ اول کی بے حرمتی اور مقدس مقامات کی توہین بین الاقوامی قراردادوں بالخصوص سلامتی کونسل کی قرارداد 2334 کی خلاف ورزی ہے۔انہوں‌ نے غزہ کی پٹی کے گرد 13 سال سے مسلط کردہ محاصرہ ختم کرنے اور غزہ کےعوام کوآزانہ معاشی حقوق کی فراہمی کا مطالبہ کیا۔

یہ بھی دیکھیں

دشمن یمنی فوج کے انتباہ آمیز جواب سے سبق لیں اور یمن جنگ کو ختم کریں، صدر حسن روحانی

تہران (مانیٹرنگ ڈیسک)اسلامی جمہوریہ ایران کے صدر ڈاکٹر حسن روحانی نے کہا ہے کہ علاقے …