جمعرات , 18 جولائی 2019

چیک پوسٹ حملہ: عدالت نے علی وزیر کو سی ٹی ڈی کے حوالے کردیا

پشاور(مانیٹرنگ ڈیسک)انسداد دہشتگردی عدالت نے پشتون تحفظ موومنٹ (پی ٹی ایم) کے نام نہاد رہنما علی وزیر کو 8 روز کیلئے سی ٹی ڈی کے حوالے کر دیا ہے۔تفصیلات کے مطابق گزشتہ روز شمالی وزیرستان میں چیک پوسٹ پر حملے میں ملوث پی ٹی ایم رہنما علی وزیر کو بنوں کی انسداد دہشتگردی عدالت میں پیش کیا گیا۔ عدالت کے جج نے علی وزیر کو 8 دن کے لیے انسداد دہشتگردی ڈیپارٹمنٹ (سی ٹی ڈی) کی حوالے کرنے کا حکم دیا جس کے بعد انھیں پشاور منتقل کر دیا گیا ہے۔

خیال رہے کہ گزشتہ روز محسن داوڑ اور علی وزیر گروپ نے شمالی وزیرستان کے علاقے خرکمر میں چیک پوسٹ پر حملہ کر کے 5 فوجیوں کو زخمی کر دیا تھا۔ فائرنگ کے تبادلے میں شرپسندوں کے تین ساتھی ہلاک جبکہ دس زخمی ہوگئے تھے۔ اس کے بعد علی وزیر کو آٹھ ساتھیوں سمیت گرفتار کیا گیا لیکن محسن داوڑ فرار ہونے میں کامیاب ہو گیا تھا۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے مطابق محسن داوڑ اور علی وزیر کی قیادت میں گروپ نے شمالی وزیرستان کے علاقہ خرکمر میں چیک پوسٹ پر حملہ کیا۔ یہ لوگ ایک روز قبل پکڑے گئے دہشت گردوں کے سہولت کار کو چھڑانا چاہتے تھے۔

آئی ایس پی آر کا کہنا ہے کہ چیک پوسٹ پر موجود جوانوں نے انتہائی تحمل اور صبر کا مظاہرہ کیا۔ علی وزیر اور محسن داوڑ کے گروپ نے چیک پوسٹ پر براہ راست فائرنگ اور اشتعال انگیز تقاریر کیں۔ فائرنگ کے تبادلے کے نتیجے میں ان کے تین ساتھی ہلاک جبکہ 10 زخمی ہوئے۔ تمام زخمیوں کو آرمی ہسپتال میں طبی امداد کے لیے منتقل کر دیا گیا ہے۔

یہ بھی دیکھیں

وزیر اعظم کا کلبھوشن یادیو پر عالمی عدالت کے فیصلے کا خیر مقدم

وزیر اعظم عمران خان نے بھارتی جاسوس کلبھوشن یادیو کے حوالے سے عالمی عدالتِ انصاف …