اتوار , 19 جنوری 2020

سعودی عرب کو ہتھیاروں کی فروخت پر امریکی سینیٹر کا احتجاج

واشنگٹن (مانیٹرنگ ڈیسک)امریکی کانگریس کے ایک بااثر سینیٹر نے سعودی عرب کو امریکی ہتھیاروں کی فروخت کی سخت مخالفت کی ہے۔ریپبلکن پارٹی سے تعلق رکھنے والے کانگریس کے بااثر سینیٹر لنڈسی گراہم نے فاکس نیوز کے ساتھ ایک انٹرویو میں کہا ہے کہ سعودی ولیعہد بن سلمان صحافی جمال خاشقجی کے قتل میں شریک ہیں اس لئے سعودی عرب کو ہتھیاروں کی فروخت نہیں ہونی چاہئے-لنڈسی گراہم نے اگرچہ سعودی عرب کو امریکا کا اتحادی قرار دیا تاہم کہا کہ سعودی عرب کو ہتھیاروں کی فروخت امریکا کے قومی مفادات کے منافی ہے-

واضح رہے کہ امریکی وزیر خارجہ نے ابھی دو روز قبل یہ بیان دیا تھا کہ کانگریس کو بائی پاس کر کے ہنگامی حالت کے پیش نظر سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات کو آٹھ ارب ڈالر کے ہتھیار فروخت کئے جا رہے ہیں-قومی سطح پر ہنگامی حالت کے نفاذ کی صورت میں ٹرمپ کو یہ اختیار ہے کہ وہ کانگریس کی اجازت کے بغیر ہتھیار فروخت کر سکتے ہیں اور اب ٹرمپ انتظامیہ کے اس فیصلے پر کانگریس اور امریکی حکومت کے درمیان اختلافات پیدا ہو گئے ہیں-

یہ بھی دیکھیں

بھارت خطرناک ممالک میں شامل

عالمی ادارے دی اسپیکٹیٹر نے بھارت کو رہنے کے لیے خطرناک ملک قرار دے دیا۔مودی …