جمعہ , 19 جولائی 2019

جمہوریہ چیک کا اسرائیل میں سفارت خانہ القدس منتقل نہ کرنے کا فیصلہ

یروشلم (مانیٹرنگ ڈیسک)جمہوریہ چیک نے سوموار کے روز ایک بیان میں کہا ہے کہ چیک ری پبلک اسرائیل میں قائم اپنا سفارت خانہ القدس منتقل نہیں کرے گا اور مقبوضہ بیت المقدس کو اسرائیل کا دارالحکومت تسلیم بھی نہیں کیا جائے گا۔جمہوریہ چیک کے وزیراعظم انڈریے بابیش نے کہا کہ ان کا ملک بیت المقدس کے حوالے سے بین الاقوامی قراردادوں کی پابندی کرے گا۔ یورپی یونین کا القدس کے حوالے سے موقف دو ٹوک اور واضح ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ ہم اپنا سفارت خانہ بیت المقدس منتقل نہیں کریں‌ گے۔ جمہوریہ چیک کے اس اصولی موقف پر فلسطینی اتھارٹی نے اطمینان کا اظہار کیا ہے اور کہا ہے کہ چیک ری پبلک نے اقوام متحدہ کی قراردادوں کی حمایت کر کے مثبت طرز عمل اختیار کیا ہے۔خیال رہے کہ گذشتہ برس امریکا نے بیت المقدس کو اسرائیل کا دارالحکومت تسلیم کرنے کے بعد اپنا سفارت خانہ وہاں‌ سے القدس منتقل کر دیا تھا۔ ان کے اس فیصلے پر عالمی سطح‌ پر شدید رد عمل سامنے آیا تھا۔

یہ بھی دیکھیں

ایران نےامریکا کیساتھ بات چیت کا امکان مسترد کردیا

اقوام متحدہ میں ایرانی ترجمان علی رضا میر یوسفی کا کہنا ہے کہ  امریکا کیساتھ …