جمعرات , 12 دسمبر 2019

افغانستان میں امریکی فوج موجود رہے گی، واشنگٹن

واشنگٹن (مانیٹرنگ ڈیسک)امریکہ کے جوائنٹ چیف آف آرمی اسٹاف نے کہا ہے کہ افغانستان میں امریکی فوج باقی رہے گی۔ایسی حالت میں کہ قطر میں امریکہ اور طالبان کے درمیان مذاکرات کا سلسلہ جاری ہے، امریکہ کے جوائنٹ چیف آف آرمی اسٹاف جنرل جوزف ڈنفورڈ نے کہا ہے کہ افغانستان میں دہشت گردی کے خلاف امریکی مہم جاری ہے اور اس ملک میں امریکی فوج بدستور باقی رہے گی۔

افغانستان میں جنگ و تشدد کا خاتمہ کرنے کے لئے قطر میں امریکہ اور طالبان کے درمیان مذاکرات کے کئی دور انجام پا چکے ہیں تاہم اب تک ان مذاکرات کا کوئی نتیجہ برآمد نہیں ہوا ہے۔طالبان نے کہا ہے کہ امریکہ کے ساتھ صلح اسی صورت میں ہو سکتی ہے کہ افغانستان سے تمام امریکی فوجی واپس چلے جائیں۔

واضح رہے کہ جنرل جوزف ڈنفورڈ نے افغانستان میں دہشت گردی کے خلاف امریکی مہم جاری رکھنے کی بات ایسی حالت میں کہی ہے کہ امریکہ ہی نہ صرف افغانستان بلکہ پورے ایشیا کے علاقے میں بحران و بدامنی کا باعث بنا ہوا ہے۔

یہ بھی دیکھیں

افغانستان میں امریکی دہشتگردی کے اڈے پر حملہ

افغانستان کے صوبے پروان کے کمشنر نے بگرام شہر میں امریکی دہشتگرد کانوائے کے قریب …