بدھ , 26 جون 2019

ٹرمپ کی اقتصادی جنگ ہی علاقے میں کشیدگی کاسبب ہے، محمد جواد ظریف

تہران (مانیٹرنگ ڈیسک)اسلامی جمہوریہ ایران کے وزیر خارجہ ڈاکٹر محمد جواد ظریف نے تہران میں جرمنی کے وزیرخارجہ ہایکو ماس سے اپنی ملاقات کا ذکر کرتے ہوئے کہا ہے کہ ایران علاقے کے ملکوں کے ساتھ بات چیت کا خیر مقدم کرتا ہے لیکن ٹرمپ کی اقتصادی جنگ ہی علاقے میں تمام کشیدگیوں کا باعث ہے۔ایران کے وزیر خارجہ ڈاکٹر محمد جواد ظریف نے پیر کی رات اپنے ٹویٹر پیج پر لکھا ہے کہ تہران جرمن وزیر خارجہ کے اس بیان کا خیرمقدم کرتا ہے کہ ایران کو اقتصادی فوائد پہنچانے کی غرض سے اطمینان دلانے کے لئے عملی اقدامات کی ضرورت ہے-

جرمن وزیر خارجہ ہایکو ماس نے جو ایران کے اعلی حکام سے مذاکرات کے لئے پیر کو تہران پہنچے تھے، ایرانی وزیر خارجہ سے اپنی ملاقات میں کشیدگی کم کرنے کے لئے علاقے کے ملکوں کے درمیان بات چیت اور مذاکرات پر زور دیا-جرمن وزیر خارجہ نے اپنے دورہ تہران میں ایران اور جرمنی کے تعلقات کی تازہ ترین صورتحال، ایٹمی معاہدے پر عمل درآمد اور علاقائی اور بین الاقوامی حالات اور واقعات پر بات چیت کی-

دریں اثنا ایران کی وزارت خارجہ کے ترجمان نے کہا ہے کہ ایران اور جرمنی کے وزرائے خارجہ نے دوطرفہ دیرینہ تعلقات، ایٹمی معاہدے اور علاقے میں کشیدگی کم کرنے کے بارے میں مفید اور تعمیری بات چیت کی-ترجمان وزارت خارجہ سید عباس موسوی نے کہا کہ امریکا کے غیر قانونی اقدامات اور وعدہ خلافیوں کے باوجود یورپ اور جرمنی اپنے عملی اقدامات کے ذریعے ایٹمی معاہدے کو باقی اور علاقے میں امن و استحکام کی تقویت میں مدد دے سکتے ہیں-

یہ بھی دیکھیں

علماء‌ کی صدی کی ڈیل اور بحرین کانفرنس کے خلاف مظاہروں کی اپیل

استنبول (مانیٹرنگ ڈیسک)مسلمان ممالک میں کی 25 عالمی تنظیموں‌ نے فلسطینیوں‌ کے خلاف امریکا کے’صدی …