منگل , 15 اکتوبر 2019

ایران کا واضح موقف 60 روز کی مہلت نہیں بڑھے گی;سید عباس عراقچی

تہران (مانیٹرنگ ڈیسک)ایران کے نائب وزیرخارجہ برائے سیاسی امور نے یورپی یونین کی خارجہ پالیسی کی نائب سربراہ سے ہونے والی ملاقات کے بعد کہا کہ یورپی ممالک کو جوہری معاہدے کے حوالے سے اپنی کوتاہیوں کے ازالے کیلئے دی جانے والی 60 روز کی مہلت میں اضافہ نہیں ہو گا۔اسلامی جمہوریہ ایران کے نائب وزیرخارجہ برائے سیاسی امور سید عباس عراقچی نے یورپی یونین کی خارجہ پالیسی کی نائب سربراہ ہیلگا اشمید کے ساتھ کل ہونے والی ملاقات کے بعد واضح طور پر کہا کہ تہران صرف تکراری بیان دینے کیلئے جوہری معاہدے کی مشترکہ کمیشن کا اجلاس نہیں بلائے گا۔

سید عباس عراقچی نے اس جانب اشارہ کرتے ہوئےکہ ایران نے ابھی تک یورپی ممالک کی جانب سے کوئی خاص اقدام کا مشاہدہ نہیں کیا ہے کہا کہ یورپی ممالک تیل، بینکنگ،حمل و نقل اور سرمایہ کاری کے ذریعے ایران کیلئے راستہ ڈھونڈ سکتے تھے لیکن ابھی تک ان شعبوں میں انہوں نے کمزوری دکھائی۔

ایران کے نائب وزیرخارجہ برائے سیاسی امور نے اس موقع پر کہا کہ 60 روز کی مہلت کے خاتمے کے بعد اگر جوہری معاہدے کے رکن ممالک نے ایران کے مطالبات پر عمل نہ کیا تو ایران دوسرے اقدامات کرے گا یا پھراسی دوسرے اقدام پر عمل در آمد کرے گا۔

یہ بھی دیکھیں

ایران اور پاکستان کا خطے کے مسائل کو مذاکرات کے ذریعہ حل کرنے پر اتفاق

تہران: اسلامی جمہوریہ ایران کے صدر حسن روحانی اور پاکستان کے وزیر اعظم عمران خان …