اتوار , 21 جولائی 2019

ایرانی میزائلوں نے خطے میں طاقت کا توازن تبدیل کر دیا ہے، جنرل حسین سلامی

تہران(مانیٹرنگ ڈیسک) پاسداران انقلاب نے خبردار کیا ہے کہ ایرانی میزائل سمندر میں موجود طیارہ بردار جہازوں کو نشانہ بنانے کی صلاحیت رکھتے ہیں۔تفصیلات کے مطابق امریکا اور ایران کے درمیان تنازعے میں شدت آتی جارہی ہے، البتہ فریقین نے جنگ کے بجائے مذاکرات کو معاملہ کا حل قرار دیا ہے۔غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق امریکا اور ایران ایک دوسرے پر سنگین الزامات عائد کررہے ہیں، لیکن فریقین کی خواہش ہے کہ بات چیت سے مسئلہ حل کیا جائے۔

ایرانی پاسداران انقلاب کے کمانڈر نے کہا ہے کہ ایران کے بیلسٹک میزائل سمندر میں موجود طیارہ بردار جہازوں کو انتہائی ٹھیک طریقے سے نشانہ بنانے کی صلاحیت رکھتے ہیں۔بریگیڈیئر جنرل حسین سلامی کا مزید کہنا تھا کہ یہ میزائل مقامی طور پر تیار کیے گئے ہیں اور ان کا پتہ لگانا یا پھر انہیں دیگر میزائلوں سے تباہ کرنا مشکل ہے۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ ایرانی میزائلوں نے خطے میں طاقت کا توازن تبدیل کر دیا ہے۔ خیال رہے کہ ایران اور امریکا کے درمیان بڑھتے ہوئے تناؤ کی وجہ سے امریکا نے اپنے ایک ہزار مزید فوجی اس خطے میں بھیجنے کا فیصلہ کیا ہے۔

دوسری جانب ردعمل کے طور پر چین نے متنبہ کیا ہے کہ امریکا کی جانب سے خطے میں مزید 1000 فوجیوں کی تعیناتی سے دنیا میں شرانگیزی کا دروازہ کھل سکتا ہے۔واضح رہے کہ امریکا نے مزید ایک ہزارفوجی مشرق وسطی بھیجنے کا اعلان کردیا ہے، قائم مقام امریکی وزیردفاع پیڑک شناہن کا کہنا ہے مزید فوجیوں کی تعیناتی کا فیصلہ ایرانی فوج کے جارحانہ رویے کے بعد کیا، ایران سے تصادم نہیں چاہتے، اضافی فوجیوں کی تعیناتی کا مقصد خطے میں موجود امریکی اہلکاروں اور مفادات کا تحفظ یقینی بنانا ہے۔

یہ بھی دیکھیں

عمران خان کی آمد سے تعلقات بحال ہونے کے دروازے کھل گئے، وائٹ ہاؤس

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) وزیر اعظم عمران خان کے 3 روزہ سرکاری دورے پر واشنگٹن پہنچنے …