منگل , 15 اکتوبر 2019

ایرانی پارلیمنٹرینزکی قومی اسمبلی آمد پر شاندار استقبال

تہران (مانیٹرنگ ڈیسک)اسلامی جمہوریہ ایران کی پارلیمنٹرینزکے وفد نے جوان دنوں پاکستان کے دورے پر ہے اس ملک کی پارلیمنٹ کے اراکین سے ملاقاتیں کیں۔اسلامی جمہوریہ ایران کی پارلیمنٹرینزکے وفد نے پاکستان کے ایوان زیریں قومی اسمبلی کا دورہ کیا۔ ایران کی پارلیمنٹرینزکے وفد کے قومی اسمبلی کے دورے کے موقع پراسپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر نے اپوزیشن لیڈر کی تقریر روک کر معزز مہمانوں کو خوش آمدید کہا، حکومتی و اپوزیشن اراکین اسمبلی نے ڈسک بجا کرایران کی پارلیمنٹرینزکے وفد کا بھرپوراستقبال کیا۔

اس سے قبل پاک ایران پارلیمنٹری فرینڈشپ گروپ کے چیئرمین لیفٹیننٹ جنرل (ر) عبدالقیوم نے ایران کی پارلیمان کے اراکین کا پارلیمنٹ ہاؤس پہنچنے پر پرتپاک استقبال کیا۔ ایرانی پارلیمانی گروپ کے ساتھ باہمی دلچسپی کے امور، دونوں ممالک کی پارلیمان میں تعاون کو مزید وسعت دینے سمیت دیگر امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ پاک ایران پارلیمنٹری فرینڈشپ گروپ کے چیئرمین لیفٹیننٹ جنرل (ر) عبدالقیوم نے ایرانی پارلیمانی گروپ کی پاکستان آمد پر خیر مقدم کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان اور ایران دو برادر اسلامی اور پڑوسی ممالک ہیں، جن کی تہذیب و ثقافت میں مماثلت پائی جاتی ہے۔

انہوں نے ایران کے سفیر اور ایرانی میڈیا سے بھی مختلف امور پر بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ ہمیں اپنے پڑوسی ملک ایران پر فخر ہے، ایران کی وسیع تاریخ اور کلچر ہے، ہمیں مل کر چلنے کی ضرورت ہے، چاہ بہار اور گوادر بندرگاہ کو آپس میں منسلک ہونا چاہیئے، ایران کو ریلوے کے ذریعے پاکستان کے ساتھ منسلک ہونا چاہیئے۔

سینیٹرعبدالقیوم نے کہا کہ زاہدان اور کوئٹہ کے مابین بہتر سڑک کی تعمیر ہونی چاہیئے، پاکستان اور ایران کے درمیان گیس پائپ لائن منصوبے پر کام تیز اور ٹرانسمیشن لائن، مکران کے ذریعے فیول کی ترسیل، مقامی کرنسی یا بارٹر سسٹم کے ذریعے ہونی چاہیئے۔واضح رہےکہ ان دنوں ایران کی پارلیمنٹرینزکا ایک وفد پاکستان کے دورے پر ہے۔

یہ بھی دیکھیں

ایران اور پاکستان کا خطے کے مسائل کو مذاکرات کے ذریعہ حل کرنے پر اتفاق

تہران: اسلامی جمہوریہ ایران کے صدر حسن روحانی اور پاکستان کے وزیر اعظم عمران خان …