ہفتہ , 19 اکتوبر 2019

امریکی صدر نے مارک ایسپر کو سیکریٹری دفاع نامزد کردیا

واشنگٹن(مانیٹرنگ ڈیسک) امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے مارک ایسپر کو سیکریٹری دفاع نامزد کر دیا ہے۔وائٹ ہاؤس کی طرف سے جاری بیان کے مطابق ایسپر پیٹرک شناہن کی جگہ لیں گے۔ شناہن نے رواں ہفتے اپنا نام مستقل طور پر سیکریٹری دفاع کی نامزدگی سے نکلوا دیا تھا۔ تاریخ میں پہلی بار چھ ماہ تک امریکا سیکریٹری دفاع کے عہدے سے محروم رہا ہے۔

ادھر واشنگٹن اور تہران میں کشیدگی عروج پر پہنچ گئی ہے۔ صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے ایک اور دھمکی دیتے ہوئے کہا ہے کہ ایران پر حملے کا فیصلہ واپس نہیں لیا، درست وقت کے لیے کارروائی روکی ہے۔ایرانی فوج کے ترجمان کا کہنا ہے کہ امریکا نے ایک گولی بھی چلائی تو اسے اور اتحادیوں کو ختم کر دیں گے۔ واشنگٹن پوسٹ کا دعویٰ ہے کہ امریکا نے ایرانی ویپنز سسٹم پر سائبر حملے بھی کرائے۔

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ اپنی ٹویٹ میں کہا کہ کبھی بھی تہران کے خلاف کارروائی کا فیصلہ واپس نہیں لیا، لوگ غلط رپورٹنگ کر رہے ہیں، کارروائی صرف روکی گئی ہے جو درست وقت پر ہوگی۔اس سے پہلے امریکی صدر نے ایران پر پیر کے روز سے مزید پابندیاں عائد کرنے کا اعلان کیا تھا۔ ادھر ایرانی فوج کے ترجمان نے امریکا کو جواب دیتے ہوئے خبردار کیا ہے کہ کسی بھی کارروائی کے واشنگٹن کو بدترین نتائج بھگتنے ہونگے۔ ایران کی طرف ایک گولی بھی چلائی گئی تو یہ امریکا اور اسکے اتحادیوں کے لیے تباہ کن ہوگی۔

یہ بھی دیکھیں

جاپان: خوفناک سمندری طوفان میں 65 ہلاکتوں کی تصدیق

ٹوکیو: جاپان کے وسطی اور شمالی علاقوں میں آنے والے تباہ کن سمندری طوفان ‘ہیگی …