جمعرات , 22 اگست 2019

اسرائیل مخالف ٹوئیٹس پر کینیڈین سیاست دان پارٹی عہدے سے برطرف

یروشلم (مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستانی نژاد کینیڈین سیاست دان اور کینیڈا کی نیو ڈیموکریٹک پارٹی کی نواکوشیا صوبے میں نمائندہ رانا زمان کو اسرائیل کی خلاف ٹویٹس کرنے پر پارٹی عہدے سے برطرف کردیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق پاکستانی نژاد کینیڈین سیاسی رہمنا کو اس وقت پارٹی عہدے برطرف کر دیا گیا جب انہوں اپنے ٹویٹر اکاونٹ کے زریعے اسرائیل پر فلسطینی شہریوں کی منظم نسل کشی کا الزام عائد کیا تھا، انہوں نے کہا تھا کہ ہزاروں یہودی شہری اس وقت فلسطین پہنچے جب ان کو دنیا بھر سے دھتکار دیا گیا تھا،فلسطینی شہریوں نے انکو خوش آمدید کہا اور انکی میزبانی کی لیکن آج وہی اسرائیلی فلسطینیوں کی منظم نسل کشی کر رہے ہیں،دنیا کو یہ سوچنا چاہیے کہ فلسطینیوں کے پاس مرنے کے سوا کیا راستہ رہ جاتا ہے۔

ان ٹویٹس کا نوٹس لیتے ہوئے انکے پارٹی سربراہ نے انکو عہدے سے برطرف کرنے کا فیصلہ کیا اور کہا کہ رانا زمان کے یہ جملے عدم برداشت پر مبنی ہیں جن کو کسی بھی صورت برداشت نہیں کیا جاسکتا۔یادر ہے کہ رانا زمان 1971 میں کینیڈا پہنچی تھیں جب وہ انتہائی کم عمر تھیں،وہ کینڈا میں مسلم کمیونٹی میں غربت ،انتہا پسندی اور اسلاموفوبیا کے حوالے سے آگاہی پھیلانے کے لیے معروف جانی جاتی ہیں۔

یہ بھی دیکھیں

بھارت مقبوضہ کشمیر میں عوام پر ہونے والے ظلم و بربریت کو روکے:آیت اللہ سید علی خامنہ ای

تہران (مانیٹرنگ ڈیسک)رہبرانقلاب اسلامی نے کشمیری مسلمانوں کی صورتحال پر اپنی ناراضگی، دکھ اور افسوس …