جمعرات , 22 اگست 2019

موجودہ ٹیکس نظام غیرمنصفانہ، ہڑتالوں سے ڈر کر پیچھا ہٹا تو ملک سے غداری ہوگی: وزیراعظم

اسلام آباد ( ) وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ اگر کوئی سمجھتا ہے کہ ہڑتالوں سے ڈر کر پیچھے ہٹ جاؤں گا تو وہ سمجھ لے ، میں پیچھے نہیں ہٹوں گا، پیچھے ہٹنے کا مطلب ملک سے غداری ہوگا، ملک میں ٹیکس کا موجودہ نظام غیر منصفانہ ہے ، اگر ہم تھوڑا تھوڑا بھی ٹیکس دیں تو قومی خزانے میں اتنا پیسہ آجائے گا کہ قرض کی دلدل سے نکل جائیں گے ۔گزشتہ روز یہاں گوجرانوالہ چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کی تقریبِ تقسیم انعامات سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم نے کہا ماضی میں جیسے ملک کو چلایا جارہا تھا، اب ویسے نہیں چل سکتا، لوگوں کو ایف بی آر پر اعتماد نہیں،لوگ سمجھتے ہیں کہ ایف بی آر ایسا ادارہ ہے جس میں پیسے چوری ہوتے ہیں، ایف بی آر میں 700 ارب روپے کی چوری ہوتی تھی،جسے روکنے کیلئے ایف بی آر میں اصلاحات پر کام کر رہے ہیں۔ وزیر اعظم نے کہا ہم نے سب کو ٹیکس نیٹ میں لے کر آنا ہے ، 22کروڑ افراد میں سے 15 لاکھ ٹیکس دیتے ہیں، شبر زیدی نے بتایا کہ پاکستان کا 70 فیصد ٹیکس 300 کمپنیاں دے رہی ہیں،سروس سیکٹر ایک فیصد ٹیکس دیتا ہے ،انھوں نے اگلے سال کیلئے پوری قوت سے 5500 ارب ریونیو اکٹھا کرنے کا عزم ظاہر کیا اور کہا کہ ٹیکس نظام درست ہو تو قرضے بھی اتریں گے اور ترقیاتی کام بھی ہوں گے ۔وزیراعظم نے کہا ہم تاجروں ،صنعت کاروں کیلئے آسانی پیدا کررہے ہیں، افغانستان سے سمگلنگ کی روک تھام کیلئے بات چیت چل رہی ہے اور سمگلنگ روکے بغیر انڈسٹری آگے نہیں بڑھ سکتی، شناختی کارڈ کی شرط کی مخالفت وہ تاجر کر رہے ہیں جو سمگلنگ کا سامان بیچتے ہیں۔عمران خان نے کہا میں نے ووٹ لینے کیلئے اسلام کی بات نہیں کی، مدینہ کی ریاست کے اہم اصول میں رحم ، عدل و انصاف اور کمزوروں کی داد رسی شامل تھی لیکن آج اربوں روپے کی چوری کرنے والوں کو جیل میں ائیر کنڈیشن مل رہا ہے اور جو چھوٹی چوری کرتا ہے ، سب کو پتا ہے اس کے ساتھ جیل میں کیا سلوک ہوتا ہے ۔و زیراعظم نے کہا میری باہر کوئی جائیداد اور کاروبار نہیں، میرا جینا مرنا پاکستان میں ہے ، میں ان کی طرح نہیں جو اربوں روپیہ باہر لے گئے ،جبکہ منی لانڈرنگ کرنے والوں کے مفادات کچھ اور ہیں، جن پر کیسز ہیں ان سب کے رشتہ دار باہر بھاگے ہوئے ہیں۔علاوہ ازیں وزیراعظم سے آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے ملاقات کی جس میں ملکی سکیورٹی صورت حال پر تبادلہ خیال کیا گیا۔وفاقی وزیر برائے ہائوسنگ اینڈ ورکس طارق بشیر چیمہ اور معاون خصوصی شہزاد سید قاسم بھی وزیراعظم سے ملے ۔

یہ بھی دیکھیں

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے سوئیڈش ہم منصب سے رابطہ:کشمیر کی صورت حال پر بات چیت

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے سوئیڈش ہم منصب سے رابطہ کیا …