پیر , 9 دسمبر 2019

شیخ زکزکی کو رہا کیا جائے، خطیب جمعہ تہران

تہران (مانیٹرنگ ڈیسک)تہران کے خطیب جمعہ آیت اللہ امامی کاشانی نے نائیجیریا کی اسلامی تحریک کے رہنما شیخ ابراہیم زکزکی کی جسمانی حالت پر گہری تشویش کا اظہار کرتے ہوئے قید سے ان کی فوری رہائی کی ضرورت پر زور دیا ہے۔

تہران کے خطیب نماز جمعہ آیت اللہ امامی کاشانی نے نماز جمعہ کے خطبے میں نائیجیریا میں دو ہزار پندرہ میں شہر زاریا میں اسلامی تحریک کے رہنما شیخ زکزکی کی رہائشگاہ پر ہوئے وحشیانہ حملے کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ اس ملک کی فوج نے شہر زاریا میں جارحانہ حملہ کر کے شیخ زکزکی کے دو بیٹوں سمیت سیکڑوں افراد کو شہید اور شیخ زکزکی اور ان کی اہلیہ کو زخمی حالت میں گرفتار کر کے جیل میں قید کر دیا۔انھوں نے کہا کہ جیل میں شیخ زکزکی سے کسی کو ملنے نہیں دیا جا رہا ہے جبکہ انھیں کسی بھی قسم کی طبی سہولیات بھی فراہم نہیں کی گئی ہیں۔

آیت اللہ امامی کاشانی نے کہا کہ نائیجیریا کی فوج کو امریکہ، اسرائیل اور سعودی عرب کی بھرپور حمایت حاصل ہے اور اس نے اس حمایت کی بنا پر ہی نائیجیریا میں بے گناہوں کا قتل عام کیا۔خطیب جمعہ تہران نے اسی طرح ایٹمی معاہدے سے امریکہ کی یکطرفہ علیحدگی کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ ٹرمپ کے دورحکومت میں امریکہ کو عالمی سطح پر کہیں زیادہ ذلت کا سامنا کرنا پڑا ہے۔

انھوں نے ایٹمی معاہدے کے دائرے میں ایران کے اقدامات کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ یورپی ممالک کو چاہئے کہ اپنے وعدوں پر عمل کریں ورنہ ایران کی جانب سے مزید اقدامات عمل میں لائے جانے کا سلسلہ جاری رہے گا۔آیت اللہ امامی کاشانی نے برطانوی بحریہ کی جانب سے ایرانی آئل ٹینکر کو روکے جانے کا بھی ذکر کیا اور کہا کہ برطانیہ کا یہ اقدام بین الاقوامی قوانین کی خلاف ورزی ہے۔

یہ بھی دیکھیں

ایران وعمان نے کی معاشی تعلقات کے فروغ پر تاکید

  ایران کے دورے پر آئے ہوئے علی بن مسعود السنیدی اتوار کے روزمحمد جواد …