اتوار , 7 جون 2020

خان یونس آپریشن کی ناکامی صہیونی عسکری قیادت کے اعصاب پر سوار

یروشلم (مانیٹرنگ ڈیسک)گذشتہ برس نومبر میں اسرائیلی فوج کی ایلیٹ فورس کے کمانڈوز نے فلسطین کے علاقے غزہ کی پٹی میں گھس کر خان یونس کے مقام پر ایک کمانڈو کارروائی کی مگر اس کارروائی میں صہیونی فوج کو جس شرمناک ناکامی اور شکست کا سامنا کرنا پڑا اس نے کئی گذر جانے کے بعد بھی صہیونی عسکری قیادت کی نیندیں حرام کی ہوئی ہیں۔

اسرائیل کی عبرانی نیوز ویب سائیٹ’واللا’ کی طرف سے جاری ایک رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ خان یونس آپریشن میں ناکامی نے صہیونی آرمی چیف جنرل آوی کوحاوی کی نیندیں حرام کررکھی ہیں۔ اسرائیلی تجزیہ نگار اور امیر اورن کا کہنا ہے کہ خان یونس میں اسرائیلی فوج کے ناکام فوجی آپریشن کے اثرات بھی تک صہیونی ریاست کی فوجی قیادت کے اعصاب پرسوارہیں۔ رپورٹ کے مطابق جنرل آوی کوحافی ابھی تک خان یونس آپریشن کے اعصابی دبائو سے باہر نہیں آسکے ہیں۔

رپورٹ کے مطابق چھ ماہ کا عرصہ گذر جانے کے بعد بھی اسرائیلی آرمی چیف جنرل کوحاوی ہرمجلس میں خان یونس آپریشن میں ناکامی کا رونا روتے ہیں۔خیال رہے کہ گذشتہ برس 12 نومبرکوغزہ کی پٹی میں ایک فوجی کارروائی کے دوران القسام بریگیڈ کے 7 ارکان شہید جب کہ اسرائیلی فوج کا آپریشنل کمانڈر سمیت متعدد جنگجو ہلاک ہوگئے تھے۔

یہ بھی دیکھیں

امریکہ میں جاری تشدد پر برطانوی حکومت اپنا موقف واضح کرے؛ لیبرل ڈیموکریٹ پارٹی

برطانیہ کی سیاسی جماعتوں نے ملک کے وزیر اعظم پر زور دیا ہے کہ وہ …