ہفتہ , 23 نومبر 2019

کن ارکان نے اپنا ضمیر بیچا؟ن لیگ کا سینیٹرز کیخلاف کارروائی کا فیصلہ

لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستان مسلم لیگ نواز کے صدر میاں شہباز شریف نے پارٹی پالیسی سے انحراف کرنے والے سینیٹرز پر سخت مؤقف اختیار کرنے کا فیصلہ کرلیا۔ذرائع نے بتایا کہ شہباز شریف کی زیر صدارت پارٹی سینیٹرز کا اہم اجلاس شروع ہوگیا ہے جس میں سینیٹرز راجہ ظفر الحق، پرویز رشید، ڈاکٹر اصف کرمانی، جاوید عباسی، مصدق ملک، مشاہد حسین سید اور مشاہد اللہ خان شریک ہیں۔اجلاس کے دوران شہباز شریف نے چئیرمین سینیٹ کے خلاف تحریک عدم اعتماد کی ناکامی پر اراکین سے تشویش کا اظہار کیا۔

ذرائع نے بتایا کہ اجلاس میں تحریک عدم اعتماد کی ناکامی کی وجوہات تلاش کرنے کی کوشش کی جائے گی۔اس موقع پر شہباز شریف کا کہنا تھا کہ 14 سینیٹرز نے ضمیر فروشی کی اور تحریک کو ناکام بنایا، اس حوالے سے حزب اختلاف کی تمام جماعتیں مل کر لائحہ تیار کریں گی۔

شہباز شریف کا کہنا تھا کہ حزب اختلاف کے کچھ سینیٹرز نے حکومت کے ساتھ مل کر سینیٹ اور اپنا وقار تباہ کیا ہے۔شہباز شریف کا کہنا تھا کہ ضمیر فروشی کرنے والے ارکان کو تلاش کریں گے اور کارروائی ہوگی۔

مسلم لیگ نواز کے صدر نے کہا کہ کل اجلاس میں ’ہارس ٹریڈنگ‘ جیت گئی۔انہوں نے کہا کہ اس سے صرف حزب اختلاف کا نقصان نہیں ہوا بلکہ جمہوریت کے وقار کو ایک بار پھر مجروح کیا گیا۔شہباز شریف نے اجلاس کے دوران اعلان کیا کہ تحریک عدم اعتماد کی ناکامی کی وجوہات تلاش کیا جائیں گی اور ضمیر فروشوں کو تہہ سے نکال لائیں گے۔

یہ بھی دیکھیں

پاکستان، ملائشیا اور ترکی جلد مشترکہ ٹی وی چینل شروع کرنے جارہے ہیں، وزیر خارجہ

اسلام آباد : وزیرخارجہ شاہ محمودقریشی نے کہا کہ پاکستان، ملائشیا اور ترکی جلد مشترکہ …