اتوار , 15 دسمبر 2019

مریم نواز کی پیشی،عظمیٰ بخاری اور پولیس اہلکاروں میں ہاتھا پائی

لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک)لاہور کی احتساب عدالت میں ن لیگی کی نائب صدر کی پیشی کے موقع پر ن لیگی رہنما عظمیٰ بخاری پولیس کا حصار توڑ کر احتساب عدالت پہنچ گئیں۔ اس موقع پر پولیس اہل کاروں نے ن لیگی کارکنوں اور عظمیٰ بخاری کو روکنے کی کوشش کی، جس پر بات ہاتھا پائی تک پہنچ گئی۔چوہدری شوگر ملز کیس میں گرفتار مریم نواز اور یوسف عباس کو جمعہ کے روز احتساب عدالت کے ڈیوٹی جج نعیم ارشد کے روبرو پیش کیا گیا۔ اس موقع پر سیکیورٹی کے سخت انتظامات کئے گئے۔

پولیس کی جانب سے کارکنوں کو عدالت احاطے سے دور رکھنے کیلئے سیکیورٹی حصار قائم کیا گیا، پولیس اہل کاروں کی جانب سے ن لیگی رہنما عظمیٰ بخاری کو روکنے کی کوشش کی گئی، تاہم لیگی رہنما پولیس حصار توڑ کر احتساب عدالت تک پہنچ گئیں۔ اس موقع پر عظمیٰ بخاری نے پولیس اہل کاروں سے ہاتھا پائی بھی کی۔ پولیس اہل کاروں کی جانب سے دیگر لیگی کارکنوں کو پیچھےدھکیلا گیا۔

بعد ازاں عدالت آمد پر عظمی بخاری کا میڈیا سے گفت گو میں کہنا تھا کہ سابق صدر پرویز مشرف دور میں بھی ہم پر تشدد کیا گیا، جتنا ظلم کیا جائے گا، ہمارا جذبہ اتنا بڑے گا۔ انہوں نے الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ مرد اور خواتین اہلکاروں نے مجھ پر تشدد کیا، لیگی رہنماؤں کو کمرہ عدالت آنے سے روکا جا رہا ہے۔

دوسری جانب سابق گورنر سندھ محمد زبیر اور خرم دستگیر کمرہ عدالت میں پہنچ گئے۔ مریم نواز کو جس عدالت میں پیش کیا گیا ہے، اسی عدالت میں حمزہ شہباز اور شہباز شریف کو رمضان شوگر مل کیس بھی پیش کیا جائے گا۔

یہ بھی دیکھیں

زلمے خلیل زاد کی آرمی چیف، وزیرخارجہ سے ملاقاتیں، علاقائی سلا متی: افغان مصالحتی عمل پر تبادلہ خیال

اسلام آباد: پاک فوج کے سربراہ جنرل قمر جاوید باجوہ سے افغان مصالحت کیلئے امریکہ …