منگل , 12 دسمبر 2017

میکیسکو شہر کے قریبی معدوم نسل کے ہاتھی کی باقیات ملیں

160626042631_maxico_maomath_elephnat_640x360_afp

میکسیکو(مانیٹرنگ ڈیسک)میکسیکو کے ماہرین کا کہنا ہے کہ معدوم نسل کے ہاتھی کی باقیات کو کھدائی کر کے نکالنے کا کام تکمیل کے مراحل میں داخل ہو گیا ہے۔معدوم نسل کے اس ہاتھی کی باقیات میکسیکو شہر کے قریب واقع ایک گاؤں ٹلٹیپک میں اس وقت دریافت ہوئی تھیں جب وہاں نکاسی آب کے لیے کام کیا جا رہا تھا۔اس ہاتھی کی ہڈیوں کے بارے میں یہ خیال ظاہر کیا جا رہا ہے کہ یہ 14000 سال پرانی ہیں جو بکھری ہوئی حالت میں ملی ہیں۔یہ اندازہ لگایا گیا ہے کہ شاید انسانوں نے اسے گوشت اور کھال کے حصول کے لیے ذبح کیا ہوگا۔دیگر باقیات ایک جھیل کے پاس سے ملی ہیں جہاں بھاری بھرکم ہاتھی پھنس کر رہ گئے تھے۔ ماہرِ آثارِ قدیمہ لوئس کورڈوبہ کا کہنا تھا کہ دالحکومت کے نواح سے 50 سے زائد معدوم نسل کے ہاتھیوں کی باقیات ملی ہیں۔انھوں نے بتایا کہ ٹلٹیپک سے ملنے والے ہاتھوں کی باقیات گاؤں کی ایک گلی میں دو میٹر نیچے سے ملی ہیں۔ انھوں نے بتایا کہ ان ہاتھیوں کی عمر 20 سے 25 سال کے قریب تھی اور اُن کا ڈھانچہ تقریباً مکمل ہے۔سائنسدانوں کو امید ہے کہ وہ مکمل ڈھانچے کو نمائش کے لیے پیش کر سکیں گے۔مَیمَتھ ایک قِسم کا ہاتھی جِس کی نسل اب معدوم ہو چکی ہے اور میکسیکو کے کئی علاقوں میں اس طرح کے ہاتھیوں کی باقیات ملی ہیں۔

یہ بھی دیکھیں

پاکستان سمیت دنیا بھر میں آج عالمی آزادی صحافت کا دن منایا جا رہا ہے

کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک ) ہرسال 3 مئی کو آزادی صحافت کا عالمی دن منایا جاتا ...