ہفتہ , 17 اپریل 2021

کرد سنی باغیوں نے ترک فوج کے ساتھ جھڑپ میں 3 ترک فوجیوں کو ہلاک کردیا

بغداد(مانیٹرنگ ڈیسک)عراق کے شمالی علاقے میں کرد سنی باغیوں نے ترک فوج کے ساتھ جھڑپ میں 3 ترک فوجیوں کو ہلاک کردیا ہے۔عراق کے شمالی علاقے میں کرد سنی باغیوں کے خلاف کارروائی کے دوران ہونے والی جھڑپ میں ترکی کے 3 فوجی ہلاک اور 7 زخمی ہوگئے۔اطلاعات کے مطابق ترک وزارت دفاع کا کہنا تھا کہ شمالی عراق میں ایک جھڑپ میں 3 فوجی مارے گئے۔

ترک فوج نے 2 روز قبل ہی عراق میں کردش ورکرز پارٹی (پی کے کے) باغیوں کے خلاف کارروائیوں کے تیسرے مرحلے کا آغاز کیا تھا جس کے بعد ہلاکتوں کے حوالے سے بیان جاری کیا گیا۔

ترکی نے رواں سال مئی میں ‘پی کے کے’ کے خلاف زمینی اور فضائی کارروائیوں کا آغاز کیا تھا اس سے قبل ترک فورسز نے عراق کے اندر زمینی کارروائیاں نہیں کی تھیں جبکہ اس اعلان کے بعد کرد سنی باغیوں کے خلاف کئی زمینی اور فضائی کارروائیاں کی گئیں۔

واضح رہے کہ پی کے کے نے 1984 میں مسلح کارروائیوں کا سلسلہ شروع کیا تھا اور ترکی کے جنوب مشرقی علاقے میں بھی علیحدگی کی پر تشدد تحریک کا آغاز کیا گیا تھا اور رپورٹس کے مطابق اس تنازع میں تاحال 40 ہزار سے زائد افراد ہلاک ہوچکے ہیں۔

یہ بھی دیکھیں

ایران و چین معاہدے پر امریکہ چراغ پا

امریکی صدر نے ایران اور چین کے 25 سالہ معاہدے پر سخت تشویش کا اظہار …