جمعرات , 28 مئی 2020

ایران پر الزام تراشیوں سے سانحہ یمن ختم نہیں ہوسکتا، وزیر خارجہ جواد ظریف

تہران (مانیٹرنگ ڈیسک) ایران کے وزیر خارجہ ڈاکٹر محمد جواد ظریف نے کہا ہے کہ تہران کی تجاویز کو قبول کرلیا جائے تو یمن کا معاملہ حل کیا جاسکتا ہے۔وزیر خارجہ ڈاکٹر محمد جواد ظریف نے اپنے ایک ٹوئٹ میں امریکہ کے وزیر خارجہ مائک پومپیو کو مخاطب کرتے ہوئے لکھا ہے کہ زیادہ سے زیادہ دباؤ میں ناکامی کے بعد مائیک پومپیو زیادہ سے زیادہ دھوکہ دہی پر اتر آئے ہیں۔انہوں نے کہا کہ امریکہ اور اس کے دم چھلے اس وہم کے ساتھ یمن میں پھنس گئے تھے کہ ہتھیاروں کی برتری سے جنگ جیتی جا سکتی ہے۔

وزیر خارجہ ڈاکٹر محمد جواد ظریف کا کہنا تھا کہ ایران پر الزام تراشیوں سے سانحہ یمن ختم نہیں ہوسکتا البتہ جنگ کے خاتمے اور مذاکرات کے آغاز سے متعلق ایران کی تجاویز قبول کرکے ممکن ہے یہ معاملہ ختم کیا جاسکے۔قابل ذکر ہے کہ امریکی وزیر خارجہ نے سعودی عرب کی ریفائنریوں پر یمنی فوج اور عوامی رضاکار فورس کے حالیہ ڈرون حملوں کے بعد دعوی کیا ہے کہ سعودی اہداف کے خلاف حملوں میں ایران کا ہاتھ ہے۔

یہ بھی دیکھیں

سعودی اتحاد کا یمن کے الحدیدہ ہوائی اڈے سمیت دیگر علاقوں پر فضائی بمباری

جارح سعودی اتحاد نے یمن میں الحدیدہ کے ہوائی اڈے اور اس ملک کے مختلف …