بدھ , 23 اکتوبر 2019

سعودی عرب کی دھمکیاں بے اثر، صنعا یونیورسٹی کھل گئی

صنعا(مانیٹرنگ ڈیسک)یمنی افواج نے سعودی اتحاد کی جاری مسلسل جارحیتوں کے جواب میں سنیچر کی صبح اب تک کا سب سے بڑا حملہ کیا جس کی وجہ سے سعودی اور امریکی حکام پر سکتہ طاری ہو گیا ہے۔سعودی عرب نے حملے پر جواب کاروائی کی دھمکی دی ہے تاہم یمنی عوام کا اطمئنان دیکھنے کے قابل ہے۔ مذکورہ ویڈیو میں سعودی عرب کی دھمکیوں کے باوجود شجاع اور دلیر یمنی عوام نے صنعا یونیورسٹی کو کھول کر یہ دکھا دیا کہ وہ وہ کسی سے بھی خوفزدہ نہیں ہیں۔ سعودی عرب پر سنیچر کی صبح ہونے والےحملے میں بیک وقت دس ڈرون طیاروں نے بقیق اور حریض کی آئل ریفائنریوں کو نشانہ بنایا ہے۔

سعودی عرب کی دھمکیاں بے اثر، صنعا یونیورسٹی کھل گئی

سعودی عرب کی دھمکیاں بے اثر، صنعا یونیورسٹی کھل گئی

Gepostet von Iblagh News am Montag, 16. September 2019

یمن کی مسلح افواج کے ترجمان یحی السریع نے اعلان کیا کہ یہ ڈرون حملے یمن پر سعودی جارحیت کے جواب میں کیے گئے ہیں اور آئندہ ایسے مزید حملے کیے جائیں گے۔ہفتے کی صبح ذارئع ابلاغ نے سعودی عرب کے مشرقی علاقے میں واقع سب سے بڑی تیل کمپنی آرامکو کی تنصیبات میں زبردست دھماکوں اور بڑے پیمانے پر آتشزدگی کی خبریں جاری کی تھیں۔سعودی عرب کی وزارت داخلہ نے بھی اعتراف کیا ہے کہ مشرقی علاقے میں واقع آرمکو کے دو پلانٹ کو ڈرون حملوں کا نشانہ بنایا گیا ہے۔

یہ بھی دیکھیں

امریکی فوجیوں کو عراق میں ٹھہرنے کا کوئی حق نہیں

بغداد: امریکی فوج کو شام سے خارج ہوکرعراق میں ٹھہرنے کا کوئی حق نہیں ہے۔ …