منگل , 22 اکتوبر 2019

ہمیں بیداری کا مظاہرہ کرنا ہوگا۔ تاکہ ہم تنازع فلسطین کی طرف پلٹ سکیں: لبنانی صدر

بیروت (مانیٹرنگ ڈیسک)لبنانی صدر عماد میشل عون نے کہا ہے کہ ہم پر حل مسلط کرنے کی کوشش کی کوشش کی جا رہی ہے۔ ہمیں بیداری کا مظاہرہ کرنا ہوگا۔ تاکہ ہم اصل مسئلے یعنی تنازع فلسطین کی طرف پلٹ سکیں۔ورنہ ہم نہیں جانتے کہ ہم کس انجام کو پہنچیں گے؟ وہ انجام جو بھی ہوگا بہت مشکل ہوگا’۔لبنانی صدر نے زور دے کرکہا کہ "اسرائیل میں مزید فلسطینی علاقوں کا الحاق اسرائیلی سیاسی جماعتوں کا انتخابی دوڑ میں کامیابی کا ایک پرکشش نعرہ بن چکا ہے”۔

"لہذا ہمیں آج مسئلہ فلسطین کو بنیادی ‘بنیادی نعرے’ کے طور پر اپنانا ہوگا”۔ ہمیں دلیل اور دل کی آواز سننے کے لیے واپس آنا چاہئے ، خاص طور پر چونکہ اسرائیل نہ صرف افراد کی سطح پر کام کررہا ہے ، بلکہ قوموں کی سطح پر بھی ان کو تقسیم کرنے کے لیے سرگرم ہے۔

یہ بھی دیکھیں

ترک اور کرد کا ایک دوسرے پر جنگ بندی کی خلاف ورزی کا الزام

انقرہ: شمالی شام میں 5 روزہ جنگ بندی کے اعلان کے باوجود فریقین کی جانب …