اتوار , 17 نومبر 2019

غرب اردن میں حضرت یوسف کے مقبرہ پر انتہا پسند صیہونیوں کا حملہ

نابلس:ایک ہزار صیہونی انتہا پسندوں نے صیہونی حکومت کے وزیراقتصادیات ایلی کوھین کے ساتھ مل کر غرب اردن کے شہر نابلس میں حضرت یوسف پیغمبر کے مقبرہ پر حملہ کردیا ۔

غرب اردن میں حضرت یوسف پیغمبر کے مقبرہ پر صیہونی انتہا پسندوں کی یلغار کے بعد فلسطینیوں اور صیہونی انتہا پسندوں کے درمیان جھڑپیں بھی ہوئیں –

صیہونی حکومت کے فوجیوں نے انتہا پسند صیہونیوں کی حمایت میں فلسطینی نوجوانوں پر اشک آورگیس کے گولے داغے جس کے نتیجے میں متعدد فلسطینی نوجوان زخمی ہوگئے –

صیہونی حکومت کے لئے امریکا کی کھلی اور وسیع حمایت اور خاص طور پر ٹرمپ کی طرف سے سینچری ڈیل کا معاملہ اٹھانے کے بعد سے فلسطینی علاقوں میں مسلمانوں اور عیسائیوں کے مقدس مقامات پرانتہا پسند صیہونیوں کے حملے تیز ہوگئے ہیں –

دوسری جانب ایک اکیس سالہ فلسطینی نوجوان فادی اسامہ جو چند ماہ غاصب صیہونی فوجیوں کی فائرنگ میں زخمی ہوگیا تھا زخموں کی تاب نہ لاکر شہید ہوگیا ۔

یہ بھی دیکھیں

جرائم کی عالمی عدالت نے روہنگیا مسلمانوں کیخلاف مظالم کی تحقیقات کی منظوری دیدی

ہوگ: جرائم کی عالمی عدالت (آئی سی سی) نے میانمار میں روہنگیا مسلمانوں کے خلاف …