اتوار , 17 نومبر 2019

جوہری معاہدے کے تحفظ کیلئے مذاکرات کا راستہ کھول دیا ہے: ظریف

انقرہ: ایرانی وزیر خارجہ نے کہا ہے کہ جوہری معاہدے کے تحفظ کے لئے مذاکرات کا راستہ کھول دیا ہے اور اسلامی جمہوریہ ایران نے اپنے جوہری حقوق کی پامالی کی مبنی پر چوتھے مرحلے کا فیصلہ کیا ہے.

یہ بات "محمد جواد ظریف” نے ہفتہ کے روز ای سی او کی نشست میں شرکت کے لئے ترکی پہنچنے کے موقع پر صحافیوں کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے کہی.
انہوں نے کہا کہ ہم نے جوہری وعدوں کی کمی لانے کے چوتھے مرحلے کا آغاز کیا کیونکہ بار بار اعلان کیا کہ اگر دوسرے فریقین کے اقدامات سے کوئی نتیجہ حاصل نہ ہوئے تو دوسرے مرحلوں کا فیصلہ کریں گے.
ظریف نے کہا کہ جوہری وعدوں کی کمی لانے کے اقدامات جو ایٹمی معاہدے کی مبنی پر ہیں، امریکی خلاف ورزی اور یورپ کی بد عہدی کے باوجود اس عالمی معاہدے پر مذاکرات کو جاری رکھیں گے.
ایرانی وزیر خارجہ نے کہا کہ ہم ان فریقین جو جوہری معاہدے کے تحفظ چاہتے ہیں، کے ساتھ مذاکرات کریں گے، فرانسیسی حکام اس موضوع پر اپنی گفتگو کو جاری رکھتے ہیں لہذا ہم مذاکرات کے دروازے کھولتے ہیں.
تفصیلات کے مطابق، ایرانی وزیر خارجہ محمد جواد ظریف اقتصادی تعاون تنظیم ایکو کی 24ویں نشست میں شرکت کے لئے ہفتہ کے روز ترکی پہنچ گئے.

یہ بھی دیکھیں

جرائم کی عالمی عدالت نے روہنگیا مسلمانوں کیخلاف مظالم کی تحقیقات کی منظوری دیدی

ہوگ: جرائم کی عالمی عدالت (آئی سی سی) نے میانمار میں روہنگیا مسلمانوں کے خلاف …