جمعرات , 12 دسمبر 2019

فلسطینی نوجوان امریکا کی ریاستی پارلیمنٹ کا رکن منتخب

یروشلم : والدہ نے اپنے بیٹے ڈاکٹر ابراہیم کی امریکی ریاست ورجینیا میں پارلیمنٹ کا رکن منتخب ہونے پر مبارک باد پیش کی۔

تفصیلات کے مطابق فلسطینی نژاد امریکی سیاست دان 27 سالہ ڈاکٹر ابراہیم صبری سمیرہ ریاست ورجینیا کی ریاستی پارلیمنٹ کا دوسری بار رکن منتخب ہوئے ہیں۔

فلسطینی خبر رساں ادارے کہنا ہے کہ ورجینیا کی پارلیمنٹ کے ارکان کی کل تعداد 100 ہے جن میں سے ایک فلسطینی نژاد ابراہیم ہیں جو ڈیموکریٹک پارٹی کی ٹکٹ پر رکن منتخب ہوئے ہیں۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق فلسطینی ڈاکٹر صبری سمیرہ نے اپنے بیٹے کی امریکی ریاست ورجینیا میں پارلیمنٹ کا رکن منتخب ہونے پر مبارک باد پیش کی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ ڈاکٹر ابراہیم صبری کی امریکی ریاست ورجینیا میں پارلیمنٹ کے رکن کے طورپر تقرری باعث فخر ہے اور اس نے پوری فلسطینی قوم کا سر فخر سے بلند کردیا ہے۔

خیال رہے کہ رواں برس اگست میں ابراہیم سمیرہ اس وقت عالمی ذرائع ابلاغ کی توجہ کا مرکز بنے تھے جب انہوں نے ورجینیا کے جیمز ٹاؤن شہر میں صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی تقریر کا بائیکاٹ کیا تھا، فلسطینی نوجوان ابراہیم سمیرہ کو صدر ٹرمپ کے سامنے سچ بات کہنے کی پادش میں تقریب سے نکال دیا گیا تھا۔

اس سے قبل فلسطینی نژاد مسلمان قانون ساز رشیدہ طلیب امریکا کی ڈیموکریٹ پارٹی کے ٹکٹ پر رکن منتخب ہوچکی ہیں۔

فلسطینی نژاد خاتون کے مقابلے میں ڈسٹرکٹ 13 سے ریپبلیکن پارٹی سمیت کسی بھی سیاسی پارٹی کے امیدوار نے کاغذات نامزدگی ہی داخل نہیں کروائے تھے۔

یہ بھی دیکھیں

سعودی تیل تنصیبات پر حملوں میں ایران کا ہاتھ نہیں: اقوام متحدہ

اقوام متحدہ کے معائنہ کاروں نے اعلان کیا ہے کہ اس بات کا کوئی ثبوت …