ہفتہ , 14 دسمبر 2019

انقرہ میں دو روزہ عالمی کشمیر کانفرنس، 25 ممالک کے مندوبین کی شرکت

انقرہ: ترکی کے دارالحکومت انقرہ میں دو روزہ عالمی کشمیر کانفرنس کا انعقاد ہوا جس میں 25 ممالک کے مندوبین نے شرکت کی۔

اپنے خطاب میں آزاد کشمیر کے صدر سردار مسعود خان نے کہا کہ بھارت کے ریاستی مظالم نے مسئلہ کشمیر کو سنگین عالمی مسئلہ بنادیا ہے، مقبوضہ وادی میں قید لاکھوں کشمیری عالمی امن کے لیے خطرے کی وارننگ دے رہے ہیں۔

کانفرنس سے لارڈ نذیر احمد نے بھی خطاب کیا اور کہا کہ ترکی نے کشمیر پر عالمی کانفرنس کا انعقاد کرکے دیگر ممالک کے لیے مثال قائم کردی۔

انقرہ میں جاری 25 ممالک کی نمائندگی پر مشتمل کانفرنس میں 80 لاکھ سے زائد کشمیریوں پر بھارتی ریاستی مظالم کو انسانیت اورعالمی امن کے لیے سنگین خطرہ قراردیتے ہوئے مسئلہ کشمیر کو اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق فوری حل کرنے کا مطالبہ کیا گیا۔

انقرہ میں ترک تھنک ٹینک کے اشتراک سے لاہور سینٹر فار پیس ریسرچ کی کشمیرعالمی کانفرنس کے افتتاحی اجلاس کے مہمان خصوصی صدر آزاد کشمیر سردار مسعود نے کہا کہ لاکھوں محبوس کشمیری عالمی امن کے خطرے کی وارننگ دے رہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ خصوصی حیثیت بدلنے کے بعد کشمیر دنیا کے راڈار پر اپنی گھمبیر حیثیت کے ساتھ آرہا ہے۔

کانفرنس میں پیپلز پارٹی سے تعلق رکھنے والی شیری رحمان نے بھی شرکت کی۔

یہ بھی دیکھیں

یمن کے میزائلی حملے میں دسیوں سعودی ایجنٹ ہلاک

صنعا: یمن کی مسلح افواج کے ترجمان یحیی سریع نےکہا ہے کہ قاصم میزائلوں سے …