پیر , 20 جنوری 2020

لاکھوں ڈالرز پر بیٹھنے کی پیشکش

روس کے دارلحکومت ماسکو کے ایک میوزم میں آنے والے سیاحوں کے لیے لاکھوں ڈالرز سے بھری کرسی نمائش کے لیے پیش کر دی گئی ہے۔

’منی تھرون ایکس 10′ ایک ایسی کرسی ہے جو کہ ڈھائی انچ بلٹ پروف گلاس کی پرت کی مدد سے بنائی گئی ہے۔یہ منفرد کرسی اندر سے ایک ملین ڈالرز مالیت (پاکستانی 15 کروڑ روپے سے زائد) کے نوٹوں سے بھری ہوئی ہے۔لاکھوں ڈالرز سے بھری یہ کرسی روسی دارالحکومت کے شمال میں آرٹ میوزیم میں نمائش کے لیے پیش کی گئی ہے۔اس کرسی کو روسی فنکار الیکسی سرجینکو نے ارب پتی کاروباری شخصیت ایگور رایباکوف کی شراکت سے تیار کیا ہے۔

47 سالہ بلڈنگ میٹریل سیلزمین نے ایک سماجی تقریب کے موقع پر اس کرسی کی نقاب کشائی کی۔روس کے صنعتی شہر میگنیٹوگورسک سے تعلق رکھنے والے رایباکوف روس کی چھت سازی اور انسولیشن کا مواد اور سسٹم بنانے والے سب سے بڑی صنعت ٹیکنوکول کارپوریشن کے مالک ہیں۔رایباکوف اپنی دولت کے ذریعے سب کی توجہ مرکوز کرنے کے لیے منفرد کام کرنے کی وجہ سے جانے جاتے ہیں۔اس سے قبل بھی سینٹ پیٹرزبرگ میں گیزپروم ارینا میں بزنس کانفرنس کے دوران انہوں نے حاضرین میں 2 لاکھ ڈالرز نچھاور کیے تھے۔

 

یہ بھی دیکھیں

10 سالہ بچہ ’سانپ‘ میں تبدیل ہوگیا، بے بس باپ کی مدد کی اپیل

نئی دہلی: بھارت میں ایک بچہ عجیب و غریب اور نایاب جینیاتی مرض کا شکار …