جمعرات , 1 اکتوبر 2020

پاکستان اور چین نے ایران کی حمایت کردی

پاکستان اور چین نے ایک بار پھر اسلامی جمہوریہ ایران کے جوہری معاہدے کی پاسداری اور موقف کی حمایت کردی ہے۔

پاکستان کی وزارت خارجہ کے شبعہ ترک اسلحہ کے ڈائریکٹر محمد کامران اختر نے کہا ہے کہ ایران کے ساتھ ہونے والے ایٹمی معاہدے کا تحفظ کسی ایک کی نہیں بلکہ تمام فریقوں کی ذمہ داری ہے۔اسلام آباد میں جوہری معاہدے کے بارے میں ہونے والی کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ پاکستان سمجھتا ہے کہ ایٹمی معاہدہ پیچیدہ مسائل کو حل کرنے کی غرض سے سفارت کاری کا بہترین نمونہ ہے۔

 کامران اختر نے کہا کہ پاکستان تمام فریقوں سے ایٹمی معاہدے پر یکساں عملدرآمد کا خواہاں ہے اور ہمیں امید ہے کہ فریقین باہمی اختلافات کو دوستانہ طریقے سے حل کرلیں گے۔دوسری جانب چین کی وزارت خارجہ نے ایران کے خلاف امریکا کی خودسرانہ اور یک طرفہ پابندیاں ختم کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

چین کی وزارت خارجہ کی ترجمان ہوا چون ینگ نے بیجنگ میں صحافیوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ امریکہ ایمٹی معاہدے کے باقی ماندہ ملکوں کو بھی پابندیوں کی دھمکیاں دے رہا ہے۔انہوں نے امریکہ سے کہا کہ وہ ایران کے خلاف زیادہ سے زیادہ دباؤ کی غلط پالیسی ختم اور مغربی ایشیا میں فوجیں تعینات کرنے کی دھمکیوں سے باز آجائے۔

یہ بھی دیکھیں

ایران اور حزب اللہ کے خلاف شاہ سلمان کی ہرزہ سرائی، مخالف اتحاد بنانے کا مطالبہ

ریاض: سعودی عرب کے شاہ سلمان نے اسلامی جمہوریہ ایران اور اسلامی مزاحمتی تحریک حزب …