ہفتہ , 8 اگست 2020

رہنے کے لیے نہیں، کھانے کے لیے پورا قصبہ تعمیر کر لیا گیا

پولینڈ: ڈھائی سو سے زیادہ عمارتوں پر مشتمل ایک ایسا انوکھا قصبہ تعمیر کیا گیا ہے جس میں رہایش اختیار نہیں کی جائے گی بلکہ اسے کھایا جائے گا۔

تفصیلات کے مطابق کرسمس کی آمد آمد ہے، کرسمس ٹری اور تحائف کے لین دین کے ساتھ ساتھ کھانے پینے کی روایتی اشیا کے بغیر کرسمس کا تہوار ادھورا سمجھا جاتا ہے۔

اس غرض سے پولینڈ میں مزے دار جنجر بریڈ سے پورا قصبہ تعمیر کر لیا گیا ہے، یہ جنجر بریڈ ٹاؤن نمایش کے لیے بھی پیش کر دیا گیا ہے، یہ 250 سے زائد عمارتوں، جھولوں، اور گاڑیوں پر مشتمل ہے، یہاں ہر چیز مزے دار جنجر بریڈ بسکٹس سے بنائی گئی ہے۔

یہ کارنامہ پولینڈ کے علاقے گیلوِس میں 30 سے زائد آرٹسٹس نے انجام دیا، اس میں سیکڑوں گھر، ایک چرچ اور ایک قلعہ بھی بنایا گیا ہے، صرف قلعہ 3500 مزے دار جنجر بریڈ بسکٹوں سے بنایا گیا، یہ بسکٹ بھی ہاتھ سے تیار کیے گئے تھے۔

جنجر بریڈ ٹاؤن میں چاکلیٹس سے دو ریل گاڑیاں بھی بنائی گئی ہیں جو چند سو جنجر بریڈ نفوس پر مشتمل شہر کی گلیوں میں دوڑتی پھرتی ہیں۔ خیال رہے کہ جنجر بریڈ سٹی کی تعمیر میں کئی ٹن جنجر بریڈ آٹا، سیکڑوں انڈے، کئی پاؤنڈ پاؤڈر شوگر اور بہت سارا شہد استعمال ہوا ہے۔

یاد رہے کہ 2015 میں نیویارک میں ماہر شیف نے جنجر بریڈ سے ایک مکمل گاؤں تعمیر کیا تھا جو 1 اعشاریہ 5 ٹن وزنی اور 5 سو اسکوائر فٹ رقبے پر مشتمل تھا، یہ ایک عالمی ریکارڈ تھا۔

یہ بھی دیکھیں

یہ دنیا کی ’سب سے سیاہ‘ مچھلی ہے

لاس اینجلس: امریکی سائنسدانوں کی ایک ٹیم نے سمندر کی اتھاہ و تاریک گہرائیوں سے …