بدھ , 29 جنوری 2020

ایران اور ترکی کے وزرائے خارجہ کی ملاقات

اسلامی جمہوریہ ایران کے وزیرخارجہ نے استنبول میں ہارٹ آف ایشیا کانفرنس کے موقع پر ترکی کے وزیرخارجہ سے ملاقات کی ہے۔

ایران کے وزیرخارجہ ڈاکٹر محمد جواد ظریف نے اپنے ترک ہم منصب مولود چاؤش اوغلو سے ملاقات میں مختلف دوطرفہ تعلقات کے پہلوؤں اور اہم ترین علاقائی اور عالمی مسائل منجملہ شام، عراق اور افغانستان کے حالات پر تبادلہ خیال کیا – وزرائے خارجہ کی سطح پر آٹھویں ہارٹ آف ایشیا کا نفرنس پیر کو ترکی کے صدر رجب طیب اردوغان اور افغانستان کے صدر اشرف غنی کی تقریروں سے شروع ہوئی۔ آٹھویں ہارٹ آف ایشیا کانفرنس کا پہلا اجلاس دوہزار گیارہ میں افغانستان کے مسائل پر توجہ دینے کے لئے منعقد ہوا تھا جس کا مقصد افغانستان کے بارے میں علاقائی ملکوں کے تعاون کو فروغ دینا ہے۔ ہارٹ آف ایشیا کانفرنس کے چودہ ممالک منجملہ ایران ترکی اور افغانستان ممبر ہیں اور دنیا کے سترہ ممالک اور اداروں کی اسے حمایت حاصل ہے۔

یہ بھی دیکھیں

یمن، نہم کا علاقہ سعودی اتحاد کا قبرستان بن گیا، 2 ہزار فوجی قیدی، 400 ہلاک و زخمی + ویڈیو

یمن یمن، نہم کا علاقہ سعودی اتحاد کا قبرستان بن گیا، 2 ہزار فوجی قیدی، …