پیر , 21 ستمبر 2020

ترک تاریخ کی دھجیاں اڑانے کی کوششیں کی جا رہی ہیں: اردوان

انقرہ: ترک صدر رجب طیب اردوان نے کہا کہ ہماری ہزاروں سالہ تاریخ کی دھجیاں اڑانے کی کوششیں کی جا رہی ہیں۔ انقرہ کے ملت کنونشن و کلچرل سینٹر میں خطا ب کرتے ہوئے صدر اردوان نے کہا بغداد، دمشق اور حلب کی طرح کی قدیم تہذیبوں کے گہواروں کی اینٹ سے اینٹ بجائے جانے کے وقت پیرس، لندن، روم اور برلن کے حکام چپ سادھے بیٹھے رہے ۔ پہلی اور دوسری خلیج جنگ کے دوران عراق کے تاریخی اور ثقافتی ورثوں کی لوٹ مار یا پھر تخریب کاری کیے جانے کی یاد دہانی کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ افغانستان اور شام میں بھی نہ صرف انسانوں بلکہ اس کے ساتھ ساتھ ہزار وں سالہ تاریخی و ثقافتی اقدار کو بھی تباہ و برباد کرنے کی کوششیں کی جا رہی ہیں۔انہوں نے مزید بتایا کہ اس جغرافیہ میں زندگی بسر کرنے والی تمام تر تہذیبوں کی مشترکہ خصوصیت مغرب پر بالادستی قائم کرنے پر مبنی ہے ۔

یہ بھی دیکھیں

سعودیہ اپنے تاجروں پر دبائو ڈال رہا ہے کہ وہ ترکی سے تجارت نہ کرے؛ ترکی

ترک صدر اردوغان کا کہنا ہے کہ سعودی عرب کے حکام گذشتہ برس سے ترکی …