ہفتہ , 18 جنوری 2020

ایران میں ہاتھ سے بُنے قالینوں کی برآمدات

اسلامی جمہوریہ ایران میں رواں سال کے ابتدائی 4 مہینوں کے دوران، 3 کروڑ ڈالر پر مشتمل ہاتھ سے بُنے ہوئے قالینوں کی برآمدات ہوئی ہیں۔

ہاتھ سے بُنے ہوئے قالینوں کی یونین کے منیجنگ ڈائریکٹر عبداللہ بہرامی نےکہا کہ گزشتہ سال کے دوران، ملک میں 2۔4 کروڑ ڈالرمالیت کے ہاتھ سے بُنے ہوئے قالینوں کی برآمدات ہوئی ہیں۔

 عبداللہ بہرامی نے اتوار کے روز تیل کی مصنوعات کی برآمدات کے انحصار میں کمی لانے اور دستکاری مصنوعات کی برآمدات میں اضافے کی منصوبہ بندیوں پر روشنی ڈالتے ہوئے کہا کہ ایران میں قالین اور دستکاری مصنوعات کے شعبے میں بے پناہ صلاحتیں موجود ہیں جن کو بروئے کار لانے سے اس سے حاصل ہونے والی آمدنی کو تیل کی مصنوعات کی برآمدات کا متبادل قرار دیا جاسکتا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ ملک میں 20 لاکھ افراد قالین بننے کی صنعت سے وابستہ ہیں اور سالانہ 60 لاکھ میٹر ہاتھ سے بُنے ہوئے قالین تیارکیے جاتے ہیں، جن کی برآمدات سے 3 ارب ڈالر تک آمدنی حاصل ہوسکتی ہے۔

بہرامی نے کہا کہ ایران میں ہاتھ سے بُنے ہوئے قالینوں کے 90 فیصد کو برآمد کیا جاتا ہے اور ایرانی قالینوں کی سب سے اہم مارکیٹ جرمنی، متحدہ عرب امارات، جنوبی افریقہ، جاپان اور چین ہیں۔

واضح رہے کہ ایرانی قالین دنیا بھر میں مشہور ہیں۔

یہ بھی دیکھیں

رواں مالی سال کے پہلے 5 ماہ میں قرضوں کے حجم میں 344 ارب روپے کا اضافہ

کراچی: رواں مالی سال کے پہلے 5 ماہ میں قرضوں کے حجم میں 344 ارب …