پیر , 24 فروری 2020

گوگل پلے اسٹور کی وجہ سے یہ چیز ’خشک‘ ہورہی ہے

نیویارک: سائبر سیکیورٹی پر نظر رکھنے والی کمپنی نے انکشاف کیا ہے کہ گوگل پلے اسٹور پر دستیاب اشتہاری گیمز اور دیگر ایپس صارفین کے لیے کسی بھی خطرے سے کم نہیں ہیں کیونکہ ان کی وجہ سے موبائل کی بیٹری جلدی ختم ہوجاتی ہے۔سائبر سیکیورٹی کمپنی بیٹیڈ فینڈر کی جانب سے جاری ہونے والی تحقیقی رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ گوگل پلے اسٹور پر اس وقت بھی درجنوں ایپس ایسی ہیں جن کی مدد سے تشہیر کی جارہی ہے۔

رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ ایپ استعمال کرنے کے دوران سامنے آنے والے اشتہارات سے صارفین اس قدر پریشان ہیں کہ بیشتر اسے بم تک قرار دے چکے ہیں۔تحقیقی رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ گوگل پلے اسٹور پر ڈالی جانے والی ایپس کے ساتھ اشتہار دینے کے لیے مختلف حربے استعمال کیے جاتے ہیں، علاوہ ازیں اب چند ایسی ایپس پر بھی صارفین کا اعتماد ختم ہوچکا جو وہ پہلے استعمال کرتے تھے۔

رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ ان ایپس کو اب تک پچاس لاکھ سے زائد صارفین ڈاؤن لوڈ کرچکے ہیں، بیشتر موسم کا حال بتانے والی یا ایسی ایپلیکشنز ہیں جو کیو آر کوڈ کی مدد سے چلتی ہیں۔بیٹیڈ فینڈر کی رپورٹ کے مطابق ان ایپس میں ایک خاص قسم کا مالویئر (وائرس) پایا جاتا ہے جو نہ موبائل کی بیٹری کو وقت سے پہلے ختم کردیتا اور پھر اسے استعمال کے قابل بھی نہیں چھوڑتا‘۔کمپنی کی جانب سے یہ بھی انکشاف کیا گیا ہے کہ مذکورہ ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے والے صارفین کے فون تک گوگل پلے اسٹور کی رسائی ممکن ہوجاتی ہے اور وہ کسی بھی وقت موبائل چیک کرسکتے ہیں کہ جس صارف نے اشتہارات کو بند کردیا ہے۔

دوسری جانب گوگل نے سائبر سیکیورٹی کمپنی کی جانب سے عائد ہونے والے الزام پر ردعمل دیتے ہوئے کہا ہے کہ ہم جلد ہی نشاندہی کی جانے والی ایپس کو اسٹور سے ہٹا دیں گے تاکہ صارفین کو بہتر اور محفوظ پلیٹ فراہم فراہم کیا جائے۔گوگل ترجمان کے مطابق پلے اسٹور پر موجود ایپس کے ساتھ صارفین کو ڈاؤن لوڈنگ کے وقت خبردار کرنے کا پیغام بھی دکھایا جاتا ہے۔

یہ بھی دیکھیں

مسابقتی کمیشن پاکستان میں شرائط کے ساتھ اوبر، کریم کا انضمام منظور

اسلام آباد: مسابقتی کمیشن پاکستان (سی سی پی) نے رائیڈ شیئرنگ ایپ کمپنیوں اوبر اور …