منگل , 25 فروری 2020

کیا سڈنی، میلبورن اور ایڈیلیڈ آگ سے بچ سکیں گے؟

سڈنی: آسٹریلیا کے جنگلات میں لگی آگ نے آسٹریلوی ریاست وکٹوریا، نیوساؤتھ ویلز اورساؤتھ آسٹریلیا کوبری طرح متاثر کرنے بعد اب سڈنی اور میلبورن کیا رخ کرلیا ہے۔آگ سے متاثرہ بڑی ریاست نیوساؤتھ ویلز کےدارالحکومت اورآسٹریلیا کے اہم ترین شہرسڈنی سے اگرچہ آگ اب بھی کافی دوری پر ہےتاہم آگ کے دھوئیں نےشہر کو اپنی لپیٹ میں لینا شروع کردیا ہے۔سڈنی تک آنے والے دھوئیں کی وجہ سے شہریوں کو سانس لینے میں مشکلات کا سامناکرناپڑرہا ہے جبکہ اسی ریاست کے قریب ہی دارالحکومت کینبرا واقع ہے اور وہاں تک بھی آگ کے دھوؤں کے اثراتپہنچےہیں۔

دوسری جانب ریاست وکٹوریا کےاہم ترین شہر میلبورن سے بھی آگ 50 سے 70 میل کی دوری پر ہے اور آگ کے اثرات شہر تک پہنچنا شروع ہوگئے ہیں۔اسی طرح ایڈیلیڈ سےبھی آگ 80 میل کی دوری پر ہے اور آگ کے دھوئیں نے اس شہر کو بھی اپنی لپیٹ میں لے لیا ہے۔ماہرین کا کہنا ہے کہ اس بات کے امکانات بہت کم ہیں کہ آگ آسٹریلیا کے3 بڑے شہروں تک پہنچے کیوں کہ ان تینوں شہروں میں آسٹریلوی فوج کے اڈوں سمیت فائر فائیٹرز اور دیگرحکومتی ادارے موجود ہیں اور مذکورہ شہروں میں فوج، فائر فائٹرز اور دیگر ریسکیو اہلکاروں کوپہلے ہی ہائی الرٹ کردیا گیا ہے۔تاہم آگ کےانتہائی قریب پہنچنے اوران شہروں تک دھوئیں کےپھیلنے کی وجہ سے لوگوں میں خوف پایا جاتا ہے اور ایک بہت بڑی آبادی کو سانس لینے سمیت دیگر امور سر انجام دینے میں مشکلات کاسامنا ہے۔

 

یہ بھی دیکھیں

کرونا وائرس کی آندھی نے عالمی اسٹاک مارکیٹ ہلا کر رکھ دی

چین میں سامنے آنے والے ‘کرونا’ وائرس نے صرف چین بلکہ پوری دنیا کی معیشت …