منگل , 25 فروری 2020

تحریک انصاف کے 20 ارکان پنجاب اسمبلی نے علیحدہ گروپ بنالیا

حکمران جماعت پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے 20 ارکان پنجاب اسمبلی نے مسائل حل کرانے کیلئے گروپ بنالیا۔ارکان اسمبلی نے حلف اٹھایا ہے کہ ایک دوسرے کے ساتھ رہیں گے اور مل کر مطالبات منوائیں گے۔گروپ نے وزیراعلیٰ پنجاب سے اپنے اپنے حلقوں کے لیے فنڈز اورعوامی منصوبوں کا مطالبہ کردیا ہے۔شکوے شکایتیں، پی ٹی آئی کے پارلیمانی اجلاس کی اندرونی کہانی سامنے آگئی فواد چوہدری نے خود تو کینال منظور کروالی، باقی لوگ ووٹرز کو کیا منہ دکھائيں؟ ارکان کا ترقیاتی فنڈز جاری کرنے کا مطالبہ.

پی ٹی آئی رکن پنجاب اسمبلی سردار شہاب نے بتایا کہ جنوبی اور وسطی پنجاب کے 20 ارکان نے اپنا علیحدہ گروپ بنایا ہے لیکن ہم تحریک انصاف کے ساتھ ہیں ساتھ رہیں گے۔سردار شہاب نے بتایا کہ وہ تحریک انصاف کے پلیٹ فارم سے ہی آئندہ الیکشن لڑیں گے، وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار سے ان کی ملاقات میں عوامی مسائل کے حل پر بات ہوئی ہے۔جن ارکان نے علیحدہ گروپ بنایا ہے ان کے نام فی الحال سامنے نہیں آئے ہیں۔ق لیگ کی حکومت کو مطالبات پر عملدرآمد کیلئے ایک ہفتے کی مہلت حکومتی وفد نے ق لیگ کے رہنماؤں سے ملاقات کی جس میں مطالبات کے حل کے لیے تعاون کی یقین دہانی کرائی گئی

خیال رہے کہ وفاق اور پنجاب میں پاکستان تحریک انصاف کی اتحادی حکومت قائم ہے۔ وفاق میں پی ٹی آئی کے ساتھ ق لیگ، متحدہ قومی موومنٹ، بلوچستان نیشنل پارٹی مینگل ، گرینڈ ڈیموکریٹک الائنس شامل ہیں۔پنجاب میں پی ٹی آئی کے ساتھ ق لیگ اہم اتحادی ہے تاہم گزشتہ چند دنوں میں اتحادی جماعتوں نے اپنے مسائل حل نہ ہونے پر اپنے تحفظات کا اظہار کیا ہے۔پنجاب میں ق لیگ کے ساتھ ساتھ پی ٹی آئی کے اپنے ارکان بھی ترقیاتی فنڈز اور حلقے کے دیگر مسائل حل نہ ہونے پر ناراض ہیں۔گزشتہ دنوں وفاقی کابینہ کے اجلاس میں بھی ارکان نے کہا تھا کہ ارکان کا کہنا تھا کہ فواد چوہدری نے خود تو کینال منظور کروالی، باقی لوگ ووٹرز کو کیا منہ دکھائيں؟

یہ بھی دیکھیں

کرونا وائرس کی آندھی نے عالمی اسٹاک مارکیٹ ہلا کر رکھ دی

چین میں سامنے آنے والے ‘کرونا’ وائرس نے صرف چین بلکہ پوری دنیا کی معیشت …