جمعہ , 10 اپریل 2020

یمنی جنگ کے خاتمے کیلئے مذاکرات کی بدستور حمایت کرتے ہیں: ایران

تہران: نائب ایرانی وزیر خارجہ برائے بین الاقوامی اور عدالتی امور نے اس بات پر زور دیا ہے کہ  اسلامی جمہوریہ ایران یمنی جنگ کے خاتمے کیلئے مذاکرات کی بدستور حمایت کرتا ہے۔ان خیالات کا اظہار "محسن بہاروند” نے بدھ کے روز ویانا میں اسلحے سے پاک سے متعلق منعقدہ کانفرنس کے دوران گفتگو کرتے ہوئے کیا۔اس موقع پر انہوں نے ایران جوہری معاہدے سے متعلق امریکی وعدوں کے عدم نفاذ اور واشنگٹن کے یکطرفہ اور خصمانہ اقدمات پر شدید احتجاج کیا۔انہوں نے مزید کہا کہ امریکہ بطوراقوام متحدہ کی سلامتی رکن کے مستقل رکن کے اس کونسل کے قراردووں کی خلاف ورزی کرتا ہے اور دوسروں کو بھی ان کی خلاف ورزی پر مجبور کرتا ہے اور ساتھ ہی ایران کو اسی قرارداد پر پابند نہ ہونے کی وجہ سے تنقید کا نشانہ بناتا ہے۔

بہاروند نے سعودی عرب کے وزیر خارجہ کیجانب سے یمنی عوام کی حمایت کی خاطر ایران کی تنقید کے رد عمل میں کہا کہ اس جنگ کو ریاض نے آغاز کیا ہے اور ویسے ہی جاری رکھا ہے۔انہوں نے سعودی عرب کے وزیر خارجہ کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ دوسروں کو اپنی غلطی کیلئے مت ڈانٹیں۔بہاروند نے اس بات پر زور دیا کہ اسلامی جمہوریہ ایران یمنی جنگ کے خاتمے کیلئے مذاکرات کی بدستور حمایت کرتا ہے اور آپ کو علاقائی عوام کیساتھ  اپنی مرضی سے برتاؤ کرنے کا کوئی حق نہیں ہے کیونکہ وہ ضرور آپ کے اقدمات کا جواب دیں گے۔

یہ بھی دیکھیں

آج بشریت کو ایک منجی کی سخت ضرورت کا احساس ہے: رہبر انقلاب

رہبر انقلاب اسلامی نے نیمۂ شعبان اور منجی عالم بشریت، فرزند رسول امام مہدی علیہ …