منگل , 11 مئی 2021

پاکستان کے بازار حصص میں مندی برقرار، ایک مرتبہ پھر کاروبار روک دیا گیا

پاکستان اسٹاک ایکسچینج میں ایک مرتبہ پھر مندی کا رجحان دیکھا جارہا اور کاروبار کو مسلسل دوسرے روز روک دیا گیا۔بدھ کو کاروبار کا آغاز ہوا تو ایک گھنٹے کا وقت گزرنے سے قبل ہی کے ایس ای 100 انڈیکس 4 فیصد سے زائد ایک ہزار 270 پوائنٹس گر کر 27 ہزار 294 پوائنٹس پر آگیا۔اس کے علاوہ کے ایس ای 30 انڈیکس 5.33 فیصد تک گر کر 11 ہزار 859 پوائنٹس آگیا جس کے بعد کاروبار کو روکنا پڑا۔

واضح رہے کہ سیکیورٹی اینڈ ایسکچینج کمیشن پاکستان کے اپنائے گئے نئے قوانین کے مطابق کورونا وائرس کے پھیلاؤ کے دوران غیر معمولی صورتحال کی روشنی میں انفرادی اسٹاک میں ٹریڈنگ روکنے کے عمل پر نظرثانی کرتے ہوئے اسے 7.5 فیصد سے 5 فیصد کردیا گیا۔اس کے علاوہ مارکیٹ میں کاروبار روکنے کے عمل کو بھی 5فیصد سے 3 فیصد میں تبدیل کیا گیا ہے اور اسے کے ایس ای 30 انڈیکس کے بڑے کیمپ سے جوڑا گیا ہے۔آج کاروبار کی معطلی کے بعد دوبارہ دوپہر 2 بجے ٹریڈنگ کی بحالی کا امکان ہے۔واضح رہے کہ گزشتہ روز بھی پاکستان اسٹاک ایکسچینج میں شدید مندی کا رجحان دیکھا گیا تھا کے ایس ای 100 انڈیکس 2 ہزار ایک سو پوائنٹس پر بند ہوا تھا۔

منگل کو کے ایس ای 100 انڈیکس ایک ہزار 826 پوائنٹس گرنے جبکہ کے ایس ای 30 انڈیکس 928 پوائنٹس گرنے کے بعد کاروبار کو عارضی طور پر معطل کردیا گیا۔اس سے قبل گزشتہ ہفتے 3 مرتبہ جبکہ اس سے قبل گزرنے والے ہفتے میں بھی 3 مرتبہ کاروبار کو روکنا پڑا تھا۔واضح رہے کہ کورونا وائرس کے باعث مختلف صوبوں اور علاقوں کی جانب سے لاک ڈاؤن کے اعلان اور آرمی کو طلب کیے جانے کے ایک روز بعد سے ہی مارکیٹ مندی کا شکار نظر آرہی ہے۔یاد رہے کہ پاکستان میں کورونا وائرس کے کیسز میں تیزی سے اضافہ ہورہا ہے اور ملک میں مجموعی متاثرین کی تعداد 1000 کے قریب پہنچ چکی ہے۔ملک میں سب سے زیادہ کیسز سندھ میں سامنے آئے ہیں جہاں تعداد 410 ہے جبکہ اس کے بعد پنجاب میں 296 کیسز ریکارڈ کیے گئے ہیں۔

یہ بھی دیکھیں

ایران و چین معاہدے پر امریکہ چراغ پا

امریکی صدر نے ایران اور چین کے 25 سالہ معاہدے پر سخت تشویش کا اظہار …