بدھ , 23 ستمبر 2020

شامی اور روسی فوج کی کمک بھاری ہتھیاروں کے ساتھ ادلب کی طرف روانہ ہوگئی

5 مارچ کو ماسکو معاہدے سے دہشت گرد تنظیم کی دستبرداری کے بعد شامی فوج  نے بڑے پیمانے پر کارروائی شروع کرنے کی تیاری کر رہی ہے۔شمال مغربی شام میں ایک عسکری ذریعے کے مطابق ، شامی اور روسی فوجی دستوں نے رواں ہفتے ادلیب گورنری کو مزید کمک بھیج دی ہے ، جن کے اہلکاروں میں زیادہ تر مشیر شامل ہیں۔
روسی فوج نے مارچ کے آخر تک ترک افواج کو ایم -4 شاہراہ (حلب-لاتاکیا ہائی وے)  خالی کروانے کا ٹاسک دیا تھا تاہم ہے۔ تاہم ترک فوج عسکریت پسندوں کو علاقے سے نکالنے میں ناکام رہی ہے۔یہ ماسکو معاہدے کی ایک شرائط تھی ، جسے ترکی نے ادلیب گورنری میں جنگ بندی پر عمل درآمد کرنے میں مدد فراہم کی تھی۔تاہم اب شام اور روسی فوج کی کمک بھاری ہتھیاروں کے ساتھ ادلب کی طرف روانہ ہو گئی ہے تاکہ دہشت گردوں کا صفایا کیا جا سکے

یہ بھی دیکھیں

عبدالمجید اچکزئی کی بریت کا فیصلہ بلوچستان ہائی کورٹ میں چیلنج

کوئٹہ: محکمہ پولیس بلوچستان نے عبدالمجید اچکزئی کی بریت کے فیصلہ کو بلوچستان ہائی کورٹ …