اتوار , 29 مارچ 2020

کروناوائرس: ’’آئسولیشن میں نہیں جاؤں گی‘‘ خوبرو لڑکی نے خودکشی کرلی

لندن: برطانیہ میں کروناوائرس کے پیش نظر سیلف آئسولیشن کے ڈر سے خوبرو لڑکی نے خود کشی کرلی۔غیرملکی خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق یہ واقعہ برطانیہ کے علاقے ’’نورفلوک‘‘ میں پیش آیا جہاں 19 سالہ ویٹرس نے سیلف آئسولیشن کے ڈر سے زہریلی شے کھا کر خودکشی کرلی۔رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ کروناوائرس کے باعث خاتون سیلف آئسولیشن اختیار نہیں کرنا چاہتی تھی اسی ضمن میں وہ ذہنی دباؤ کا شکار تھی۔ بعد ازاں خوب رو لڑکی نے اپنی جان لے لی۔زہریلی شے کھانے کے بعد وہ مقامی اسپتال میں زیرعلاج تھی تاہم جانبر نہ ہوسکی۔

لڑکی کے خاندان کا کہنا ہے کہ ’’ایملی‘‘ سیلف آئسولیشن کا سن کرہی بہت ڈر گئی تھی، اس کی نظر میں آئیسولیشن کے باعث دنیا ساکن تھی، اسی صورت حال نے اسے شدید ذہنی دباؤ کا شکار کردیا تھا۔انہوں نے بتایا کہ لڑکی کو یہ برداشت نہیں ہوا کہ کوئی میری پلاننگ کو خراب کرے، سیلف آئسولیشن کے باعث اس کے خواب ٹوٹ رہے تھے اور بلاآخر اس نے خود کشی کرلی۔ایملی کے دوستوں کا کہنا ہے کہ اس جیسی ہمدرد اور دوسروں کا خیال رکھنے والے لڑکی ہم نے آج تک نہیں دیکھی، وہ سب سے اخلاق کے ساتھ پیش آنے کے علاوہ ہرمشکل میں ساتھ دیتی تھی۔

 

یہ بھی دیکھیں

بھارت میں لاک ڈاؤن: روزگار کے خاتمے، بھوک کے باعث لوگوں کی بڑی تعداد میں نقل مکانی

بھارت میں کورونا وائرس کے بڑھتے ہوئے خطرے کو روکنے کے لیے حکومت کی جانب …