بدھ , 12 مئی 2021

چین یا روس کی طرف دیکھنے کی ضرورت نہیں، فرانس اطالوی عوام کی مدد کیلئے موجود ہے، ایمانوئل میکرون

پیرس:فرانسیسی صدر ایمانوئل میکرون نے کہا ہے کہ اٹلی کے لوگوں کو امداد کےلئے چین یا روس کی طرف دیکھنے کی ضرورت نہیں، فرانس حکومت آپ کی ہرممکن مدد کےلئے موجود ہے۔ یہ بات انہوںنے اٹلی کے اخبارات کو خصوصی انٹرویو دیتے ہوئے کہی۔ میکرون نے کہا کہ اطالویوں کو کورونا وائرس سے لڑنے کے لئے چین یا روس کی امداد کے بارے میں بات کرنے میں محتاط رہنا چاہئے۔ میکرون نے یورپ میں مضبوط بجٹ میں یکجہتی کا مطالبہ بھی کیا۔ انہوںنے کہا کہ فرانس اٹلی کے ساتھ ہے۔چینی یا روسی امداد کے بارے میں بہت سی باتیں ہو رہی ہیں ، لیکن ہم یہ کیوں نہیں کہتے ہیں کہ فرانس اور جرمنی نے20 لاکھ ماسک اور دسیوں ہزار گاؤن اٹلی کو پہنچائے ہیں؟میکرون نے کہا۔ یہ کافی نہیں ہے ، لیکن یہ صرف ایک آغاز ہے اور ہمیں اپنے بین الاقوامی شراکت داروں اور حریفوں کی باتوں کا اپنے آپ کو عادی نہیں ہونے دینا چاہئے۔”

اٹلی ، دنیا بھر میں اس وائرس سے سب سے زیادہ متاثرہ ملکوں میں سے ایک ہے ، واضح ۔رہے کہ فرانس اورجرمنی اس وقت شدید شدید تنقید کا نشانہ بنے جب انہوں نے شروع میں اس وبا سے نمٹنے میں مدد کے لئے چہرے کے ماسک اور دیگر سامان مہیا کرنے سے انکار کردیا۔ روم نے چین کی مدد کے لئے اس کا رخ کیا ، جس نے ماسک اور وینٹی لیٹروں سے بھرا ہوا ہوائی جہاز بھیج دیا جس میں "فورزا اٹلیہ” کے اسٹیکرز تھے جن پر چھوٹے چینی اور اطالوی پرچم تھے اور اس نے اٹلی کے لوگوں پر زوردار تاثر چھوڑا تھا۔ میکرون نے کہا کہ یورپ کو فخر اور مضبوط محسوس کرنا چاہئے ، کیونکہ ایسا ہے لیکن یہ واقعی بہت آگے جانا چاہئے۔ یہی وجہ ہے کہ میں اس بحران کے انتظام اور اس کے نتائج کے بجٹ میں یکجہتی کا دفاع کرتا ہوں۔ "مجھے کس چیز کی فکر ہے وہ ہر انسان کی اپنے لئے بیماری ہے۔ اگر ہم یکجہتی نہیں کرتے ہیں تو ، اٹلی ، اسپین یا دیگر اپنے یورپی شراکت داروں سے یہ کہہ سکیں گےکہ جب ہم محاذ پر تھے تو آپ کہاں تھے؟ میں یہ خود غرض اور منقسم یورپ نہیں چاہتا۔

یہ بھی دیکھیں

ایران و چین معاہدے پر امریکہ چراغ پا

امریکی صدر نے ایران اور چین کے 25 سالہ معاہدے پر سخت تشویش کا اظہار …