اتوار , 16 مئی 2021

ایران میں وبا پھوٹنے کے بعد ہزاروں زائرین کی آمد میں مدد کی گئی: دفترخارجہ

پاکستان نے کہا ہے کہ کورونا وائرس کی وبا پھوٹنے کے بعد قُم اور ایران کے دیگر حصوں سے آئے ہزاروں زائرین کی پاکستان آمد میں مدد کی گئی۔ترجمان دفتر خارجہ عائشہ فاروقی نے ایک بیان میں کہا ہے کہ اگرچہ اس وقت سرحد بند ہے تاہم اپنے ہم وطنوں کے سرحد پر آنے کے بعد یہ ہماری ذمہ داری ہے کہ انہیں ملک میں آنے کی جازت دیں۔انہوں نے کہا کہ متعلقہ انتظامیہ تفتان سرحد پر پاکستان کی جانب تمام سہولیات کو اپ گریڈ اور مربوط کر رہی ہے، چونکہ یہ غیر معمولی صورتحال ہےاس لیے یہ صفر سے شروع کرنے کے مترادف ہے۔

ترجمان کے مطابق  قُم اور ایران کے دیگر حصوں میں کورونا وائرس کی وبا پھوٹنے کے بعد سے ہزاروں زائرین کی سرحد پار آنے میں مدد کی گئی ہے۔انہوں نے مزید بتایا کہ حکومت اور ایران میں ہمارا مشن زائرین کے معاملے پر مسلسل ایرانی حکومت سے رابطہ میں ہے اور یہ مل کر باہمی مشاورت سے کام کر رہے ہیں۔خیال رہے کہ ایران سے اب تک سیکڑوں زائرین پاکستان آچکے ہیں جنہیں پہلے تفتان میں قائم قرنطینہ سینٹرز میں رکھا گیا تھا جبکہ زائرین کی بڑی تعداد مہلک وبا سے متاثر ہوئی ہے۔ وزیراعظم عمران خان کے معاون خصوصی برائے صحت ڈاکٹر ظفر مرزا بھی کہہ چکے ہیں کہ ’ملک میں کورونا کے مصدقہ کیسز میں سے 78 فیصد کی ٹریول ہسٹری ایران سے ہے‘۔

 

یہ بھی دیکھیں

اسرائیلی ائربیس” حتسریم” بھی حملے کا نشانہ بن گیا

غزہ: فارس نیوز کی رپورٹ کے مطابق القسام بریگیڈ نے اپنے ایک بیان میں ہفتے …