پیر , 13 جولائی 2020

لیبیا کے بعد اب شام میں بھی روس اور ترکی کا تصادم ہو سکتا ہے

شمالی شام سے موصولہ اطلاعات سے پتہ چلتا ہے کہ ترکی نے ادلب کے علاقے میں زمین سے فضا میں مار کرنے والے میزائل نصب کر دیئے ہیں۔یہ میزائل ایم آئی ایم-23 نوعیت کے ہیں جنہیں شہر کے شمال مشرقی حصے تفتناز ائیرپورٹ پر نصب کیا کیا ہے۔ترکی کے اس قدم کا مطلب یہ ہے کہ ترک صدر رجب طیب اردوغان شمالی شام میں بڑی جنگ کی تیاری کر رہے ہیں اور اس علاقے میں شام اور روس کی فضائیہ کا کنٹرول کمزور کرنا چاہتے ہیں۔

ابھی یہ پتہ نہیں چل سکا ہے کہ ترکی کے اس اقدام سے روس اور ترکی کے درمیان گزشتہ مارچ کے مہینے میں ہونے والی جنگ بندی کے معاہدے پر کیا اثرات مرتب ہوں گے تاہم اشارے مل رہے ہیں لیبیا کی سرزمین پر ترکی اور روس کے درمیان شدید مقابلہ چل رہا ہے اور وہاں ترکی کے حامی گروہ نے روس کے حمایت یافتہ جنرل حفتر کے ٹھکانوں پر شدید حملے کئے ہیں۔ترکی کی کوشش ہے کہ وہ شام میں بھی اس چیز کی تکرار کرے اور انتہا پسند گروہوں کی مدد تیز کرکے شامی حکومت اور اس کے اتحادیوں کی پوزیشن کو کمزور کرے۔

یہ بھی دیکھیں

آیا صوفیہ کو مسجد بنانے کا فیصلہ ’تکلیف دہ‘ ہے، پوپ فرانسس

کیتھولک مسیحیوں کے پیشوا پوپ فرانسس نے استنبول کے تاریخی آیا صوفیہ کو مسجد بنانے …